قبضہ مافیا کی بڑھتی ہوئی کارروائیوں کیخلاف قبرستان بچاؤ تحریک کا احتجاجی مظاہرہ

قبضہ مافیا کی بڑھتی ہوئی کارروائیوں کیخلاف قبرستان بچاؤ تحریک کا احتجاجی ...

پشاور(سٹاف رپورٹر)قبرستان بچاؤ تحریک نے قبرستانوں پر قبضہ مافیا کی بڑھتی کاروائیوں کے خلاف گزشتہ روز پریس کلب کے سامنے بڑا احتجاجی مظاہرہ کیا مظاہرے میں حاجی آباد ،ہزار خوانی روڈ، بیری باغ، زرگرآباد اور اللہ رکھا قبرستان کے متاثرین کے علاوہ پشاور کے مختلف علاقوں سے تعلق رکھنے والے شہریوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی مظاہر ے کی قیادت قبرستان بچاؤ تحریک کے صدر غلام حسین آفریدی، جنرل سیکرٹری عبد الصمد خان اور چیئرمین سید اظہر علی شاہ کے علاوہ علاقہ عمائدین کر رہے تھے مظاہرین نے اپنے مطالبات پر مشتمل بینر اٹھا رکھے تھے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ حکومت اور ضلعی انتظامیہ کی چشم پوشی کی وجہ سے پشاور کے تمام قبرستان ایک مرتبہ پھر قبضہ مافیا کے نشانے پر آ گئے ہیں آئے روز قبروں کو مسمارکر کے قبضے کئے جا رہے ہیں جس کی وجہ سے امن و امان کا سنگین مسئلہ پیدا ہو رہا ہے اور کسی بھی وقت متاثرین اور مافیا کے درمیان ناخوشگوار واقعہ رونما ہو سکتا ہے مقررین نے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ پشاور سمیت صوبے بھر میں قبرستان مافیا کے خلاف کراچی طرز پر بلا امتیاز فوجی آپریشن کیا جائے قبرستانوں کی بے حرمتی کے خلاف دہشتگردی ایکٹ کے تحت مقدمات درج کئے جائیں اور قبرستانوں کے ایشو کو نیشنل ایکشن پلان میں شامل کیا جائے نیز قبرستانوں کے خود ساختہ چوکیداروں اور قبرکندوں کی رجسٹریشن کر کے ان کے دائرہ کارا ور حدود کا تعین کیا جائے مقررین نے بیری باغ میں مفتی خاندان کی جائیداد سمیت قبضہ کئے گئے قبرستانوں کو فوری واگزار اور مافیا کے خلاف سخت ترین کاروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے دھمکی دی ہے کہ اگر ان کے جائز مطالبات پر عملدر آمد نہ کیا گیا تو چوک یادگار سمیت اہم شاہراہوں اور بازاروں میں احتجاجی مظاہروں سمیت دھرنوں کی کال دی جائے گی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر