راولپنڈی ،رواں سال 17600مقدمات درج،200ڈکیت گینگ گرفتار،کروڑوں کا مال برآمد

راولپنڈی ،رواں سال 17600مقدمات درج،200ڈکیت گینگ گرفتار،کروڑوں کا مال برآمد

راولپنڈی ( رپورٹ ؛سید گلزارساقی )سی پی او راولپنڈی اسراراحمد عباسی کی شب روز محنت اور جرائم کے خلاف بیچ کنی کیلئے اٹھائے گئے اقدامات ،اغوء برائے تاوان ،بینک ڈکیتی کی وارداتوں میں راولپنڈی پولیس قابو پانے میں کامیاب رہی ،ضلع بھر میں ہونے والے واقعہ کی فوری مقدمات کااندارج کرتے ہوئے سائلین کو ریلیف فراہم کیا،سال 2017میں 17600 سے زائد مقدمات درج کیے 200سے زائد ڈکیت گینک گرفتار، کروڑوں روپے کا لوٹا مال برآمد ، تین ہزار اشتہاریوں سمیت پانچ ہزار کے لگ بھگ ملزمان گرفتار ،سی پی اوکے اقدامات پر بینک ڈکیتی زیرو پر آگئی ، تھانوں میں شہریوں کو فرنٹ ڈیسک کے باعث تھانوں میں حوصلہ افزائی کی گئی ،سی پی او کی مسلسل نگرانی سے تھانوں کو کلچر تبدیل ہوگیا ، شہریوں کی عزت افزائی ملی جبکہ ایف آئی آر کااندراج فوری طورپر کرنے سے عوام کا پولیس پر اعتماد بحال ہوا، روزنامہ پاکستان کی رپورٹ کے مطابق سی پی او اسرا رعباسی کی نگرانی میں پولیس کے اقدامات کے باعث کئی ایک دفعات کے تحت جرائم میں واضح کمی آئی ، بنک ڈکیتی ، اغوا برائے تاوان کے مقدمات نہ ہو نے کے برابر ہو ئے ہیں،ناجائز اسلحہ کی بر آمدگی کے1400سے زائد ریکارڈ مقدمات درج کئے گئے اسی طرح منشیات بر آمدگی کے بھی ریکارڈ2600سے زائد مقدمات درج ہو ئے ، کروڑوں روپے مالیت کی منشیات اور اسلحہ بر آمد ہو ئی اور پانچ ہزار کے لگ بھگ ملزمان صرف ان دفعات کے تحت گرفتار کیا گیا ، اسی طرح جوئے کے اڈوں کیخلاف ایک سو تیس مقدمات درج کئے گئے۔ پولیس ذرائع سے ملنے والی اعدادوشمار کے مطابق سال2017 میں زنا بالجبر کے62گینگ ریپ کے3اور خلاف وضح فطری کے52مقدمات درج ہو ئے۔ قتل کے کل227مقدمات درج ہو ئے اقدام قتل کے345اورزخمی کر نے کے694مقدمات درج ہو ئے 130افراد اغوا ہو ئے اغوا برائے تاوان کے واقعات میں کمی آئی جس میں پورے سال میں صرف ایک مقدمہ درج ہوا۔ خواتین کے اغوا کے429مقدمات درج ہو ئے ، سرکاری اداروں کیساتھ مزاحمت کے کل127مقدمات درج ہو ئے جن میں سے پولیس کے ساتھ مزاحمت کے87اور دیگر سرکاری اداروں کیساتھ مزاحمت کے40 مقدمات درج ہو ئے۔ گاڑیاں اور موٹرسائیکل چوری اور چھیننے کی وارداتوں میں بھی کمی نہیں ہو ئی اعدادوشمار کے مطابق کل چوری کی گئی گاڑیوں کی تعداد593اور موٹرسائیکلوں کی تعداد588ہے جبکہ دیگر چوری شدہ گاڑیوں کی تعداد124ہے۔ اسی طرح68موٹرسائیکل چھینے گئے،اور12گاڑیاں چھینی گئیں۔اس طرح چوری وچھینی گئی گاڑیوں اور موٹرسائیکلوں کی تعداد1385ہے۔اسی طرح سرقہ کی دیگر کی وارداتوں کے اعددوشمار کے مطابق سرقہ عام کی 493 دفعہ382 کے تحت115نقب زنی کے443سرقہ بالجبر کے348 ڈکیتی کے20بنک ڈکیتی کے ایک اور ڈکیتی کی وارداتوں میں12افراد قتل ہو ئے ۔جبکہ ضلع بھر سے سال بھر میں مویشی چوری کے74مقدمات درج ہو ئے۔ تذکرہ بالا اعدادوشمار رواں سال کے اب تک ہیں سال2017میں پولیس کو جرائم کی پیج کنی کے ساتھ ساتھ دھرنوں ، ہڑتالوں ، بڑی جلوسوں ، مذہبی جلوسوں ، محرم الحرام کی ڈیوٹیوں کی بھاری ڈیوٹی سر انجام دینا پڑی۔راولپنڈی پولیس کے ایس پیز، ڈی ایس پیز، ایس ایچ اوزاور کے تفتیشوں اور اہلکاروں کی محنت سے راولپنڈی میں جرئم کے خاتمے کیلئے اقدامات اٹھائے جارہے ہیں۔جبکہ آرپی او راولپنڈی فخر وصال سلطان راجہ نے ڈویژن بھر میں ا پنی نگرانی جاری رکھے ہوئے ہیں اور ان کی سخت قانون پر عملدرآمد کے جو اقدامات کرتے ہیں اس سے بھی جرائم میں کمی واقع رونماہوئی ہے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر