شاہ زیب کیس، ملزمان کی رہائی کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل دائر

شاہ زیب کیس، ملزمان کی رہائی کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل دائر

کراچی( اسٹاف رپورٹر)شاہ زیب قتل کیس میں نئی پیش رفت سامنے آ گئی ۔ سول سوسائٹی سے تعلق رکھنے والے جبران ناصر ، فدا حسین ، کرامت علی اور دیگر نے سندھ ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کر لیاہے ۔منگل کو سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں سماجی کارکنوں جبران ناصر ، فدا حسین ، کرامت علی و دیگر نے شاہ زیب قتل کیس سے متعلق جاری سندھ ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف درخواست دائر کردی ہے ۔ درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ حکومت اور مقتول کے ورثاء نے سندھ ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف اپیل دائر نہیں کی ، جس پر ہم نے فریق بننے کا فیصلہ کیا ۔ ہم اس لیے فریق بنیں ہیں کیونکہ ملزمان کے اقدام سے معاشرے میں دہشت پھیلی ، جس سے ہم بھی بطور شہری متاثر ہوئے ۔ درخواست میں مزید کہا گیاکہ سندھ ہائیکورٹ نے مقدمے سے دہشت گردی کی دفعات ختم کیں ، جو غلط ہے کیونکہ ملزمان کے اقدام سے معاشرہ متاثر ہوا ۔ واضح رہے کہ سندھ ہائیکورٹ نے اپنے فیصلے سے دہشت گردی کی دفعات ختم کرکے ماتحت عدالت کا فیصلہ کالعدم قرار دیا تھا ۔ سندھ ہائیکورٹ نے سزا کو کالعدم قرار دیتے ہوئے مقدمہ ازسر نو سماعت کے لیے سیشن جج جنوبی کی عدالت کو منتقل کیا تھا ۔ سیشن جج جنوبی نے گذشتہ دنوں مقدمے کے نامزد ملزمان شاہ رخ جتوئی ، سراج تالپور ، سجاد تالپور اور غلام مرتضی لاشاری کی ضمانت پانچ پانچ لاکھ کے عوض منظور کی تھی ۔ جس پر تمام ملزمان کو رہا کر دیا گیا تھا ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر