بینظیر کے زیر استعمال گاڑی اور جوتوں کی سپر داری نہ ہوسکی

بینظیر کے زیر استعمال گاڑی اور جوتوں کی سپر داری نہ ہوسکی
بینظیر کے زیر استعمال گاڑی اور جوتوں کی سپر داری نہ ہوسکی

  

راولپنڈی(ویب ڈیسک) بینظیر قتل کیس کو دس برس بیت گئے ، مقدمہ کا فیصلہ ہو نے کے باوجود بینظیر بھٹو کی گاڑی اور جوتوں کی سپر داری نہ کرائی جا سکی ۔ روزنامہ دنیا کے مطابق بینظیر قتل کیس میں مال مقدمہ کے طور پر بینظیر کے زیر استعمال لینڈ کروزر نمبرB-7772 اور بی بی کے زیر استعمال سینڈل راولپنڈی تھانہ سٹی پولیس کے پاس موجود ہیں ، مال مقدمہ میں دیگر شہداءکے جوتے دیگر چیزیں، ایلیٹ فورس کی دو گاڑیاں حملہ آوروں کے زیر استعمال دو نائن ایم ایم پسٹل بھی شامل ہیں ، اسکے علاوہ سکا ٹ لینڈ یارڈ کی طرف سے کی گئی تفتیش پر مشتمل سی ڈیز بھی مال مقدمہ میں شامل ہیں ، قتل کیس سے بری ہو نے والے دو ملزمان رفاقت اور حسنین گل کے موبائل اور دیگر سامان تھانہ ویسٹریج میں بطور مال مقدمہ موجود ہے ، بینظیر بھٹو کے زیر استعمال گاڑی اور ایلیٹ فورس کی دو گاڑیاں جو کہ تھانہ سٹی کا مال مقدمہ ہیں اڈیالہ جیل میں کھڑی ہیں ، کیونکہ کیس کی سما عت جیل کے اندر ہو تی تھی اس لئے وہاں گاڑیوں کو کھڑا کیا گیا ہے۔

لائیو ٹی وی پروگرامز، اپنی پسند کے ٹی وی چینل کی نشریات ابھی لائیو دیکھنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اخبار کے مطابق گاڑی کی سپر داری کے لئے بینظیر بھٹو کے شوہر آصف علی زرداری کی ہمشیرہ فریال تالپور کی جانب سے درخواست دی گئی تھی لیکن مقدمہ زیر سماعت ہو نے کی وجہ سے اسے مسترد کر دیا گیا تھا ، اب مقدمہ کا فیصلہ بھی ہو چکا ہے لیکن ابھی تک سپر داری کی کوئی درخواست فائل نہیں کی گئی۔

مزید : علاقائی /پنجاب /راولپنڈی