’’اب ہم مل کر یہ کام کریں گے‘‘ چین میں پاکستان اور افغانستان نے مل کر بڑا اعلان کر دیا، کیا کرنے والے ہیں؟ جان کر امریکہ کو دن میں تارے نظر آ جائیں گے

’’اب ہم مل کر یہ کام کریں گے‘‘ چین میں پاکستان اور افغانستان نے مل کر بڑا ...
’’اب ہم مل کر یہ کام کریں گے‘‘ چین میں پاکستان اور افغانستان نے مل کر بڑا اعلان کر دیا، کیا کرنے والے ہیں؟ جان کر امریکہ کو دن میں تارے نظر آ جائیں گے

  

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) گزشتہ روز چین میں پاک، چین اور افغان وزرائے خارجہ کی ملاقات ہوئی جس میں پاکستان اور افغانستان نے مل کر ایسا کام کرنے کا اعلان کر دیا ہے کہ جان کر امریکہ کو دن میں تارے نظر آ جائیں گے۔ جرمن نشریاتی ادارے ’ڈی ڈبلیو‘ کی رپورٹ کے مطابق اس ملاقات میں چین کے مطالبے پر پاکستان اور افغانستان نے مل کر افغانستان میں امن کے قیام کے لیے کوششیں کرنے کا اعلان کیا۔ چین کی طرف سے ان مذاکرات میں افغان طالبان کو بھی شامل کرنے کا مطالبہ کیاگیا۔

چینی وزیرخارجہ وینگ ژی نے پاک افغان وزرائے خارجہ خواجہ آصف اور صلاح الدین ربانی کو ہدایت کی کہ دونوں ملک باہمی تعلقات میں کشیدگی کم کرنے کے لیے اقدامات کریں اور باہم سکیورٹی تعاون کو فروغ دیں۔انہوں نے کہا کہ ’’افغانستان میں قیام امن کے لیے ان مذاکرات میں جتنی جلدی ممکن ہو سکے طالبان کو بھی شامل کیا جائے، تاکہ تمام فریقین مل کر مسئلے کا پرامن حل تلاش کریں۔‘‘

’پاکستانی ایجنسیاں اب ہمارے ملک میں۔۔۔‘ افغانستان نے اب پاکستان پر ایسا الزام لگادیا کہ پاکستانی بھی اپنا سر پکڑ کر بیٹھ جائیں گے

وزرائے خارجہ کی ملاقات کے بعد جاری مشترکہ بیان میں کہا گیا ہے کہ ’’افغانستان میں قیام امن کے لیے ایک وسیع تر اور جامع مصالحتی پراسیس شروع کیا جائے گا جو کلی طور پر افغانستان کی قیادت میں ہو گا۔‘‘ اس ملاقات میں وزارائے خارجہ نے انسداددہشت گردی کے لیے تعاون کو مضبوط بنانے اورکسی بھی شدت پسند گروہ کو اپنے اپنے ممالک کی زمین ایک دوسرے کے خلاف استعمال کرنے کی اجازت نہ دینے پر بھی اتفاق کیا۔

واضح رہے کہ ماضی میں بھی پاکستان، چین، افغانستان اور امریکہ نے مل کر طالبان سے مصالحت کی کوشش کی تھی اور پاکستان نے جولائی 2015ء میں افغان حکومت اور طالبان کے مابین مذاکرات کا اہتمام بھی کیا تھا لیکن یہ کوشش کامیاب نہ ہوسکی تھی۔

لائیو ٹی وی پروگرامز، اپنی پسند کے ٹی وی چینل کی نشریات ابھی لائیو دیکھنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

مزید : بین الاقوامی