اسرائیل کی دمشق میں بمباری ،حزب اللہ اور پاسداران انقلاب کے ٹھکانے تباہ کرنے کا دعویٰ

اسرائیل کی دمشق میں بمباری ،حزب اللہ اور پاسداران انقلاب کے ٹھکانے تباہ کرنے ...

  

یروشلم (اے این این )اسرائیل نے منگل اور بدھ کی درمیانی شب شام کے دارالحکومت دمشق میں ایرانی پاسداران انقلاب اور لبنانی حزب اللہ ملیشیا کے ٹھکانوں پر فضائی حملے کیے ہیں (بقیہ نمبر56صفحہ7پر )

جن میں حزب اللہ کے کم سے کم تین اسلحہ گودام تباہ ہوگئے ہیں۔شام میں انسانی حقوق کے آبزرور رامی عبدالرحمان نے بتایا کہ اسرائیل نے دمشق کے نواحی علاقون الکسو اور الدیماس میں حزب اللہ کے مبینہ ٹھکانوں پر بمباری کی۔اسرائیلی جنگی طیاروں نے دمشق کے جنوب اور مغرب میں حزب اللہ اور ایرانی ملیشیا کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا۔دوسری جانب شامی ذرائع ابلاغ نے رات گئے خبر دی کہ اسرائیلی میزائل حملوں سے دمشق کے نواحی علاقوں کو نشانہ بنایا گیا ہے۔ اسرائیل نے شام پر بمباری کے لیے لبنان کی فضائی حدود کو استعمال کیا ہے۔شامی محکمہ دفاع نے جوابی میزائل داغے ہیں اور ایک میزائل لبنان کی وادی البقاع میں گرا ہے۔ شام کی طرف سے داغے گئے میزائلوں کے خلاف اسرائیل نے اپنے دفاعی نظام کو فعال کردیا تھا۔ وادی گولان کی فضا میں ایران کے متعدد میزائل روک دیئے گئے ہیں۔ اسرائیل نے دعوی کیا ہے کہ وادی گولان پر روکے گئے میزائل شام سے داغے گئے تھے۔شامی فوج کا کہنا ہے کہ اسرائیلی فضائی حملے میں ایک اسلحے کے ڈپو کو نشانہ بنایا گیا ہے۔شامی فوج کے حکام نے سرکاری ذرائع ابلاغ کو بتایا ہے کہ ڈپو کو نشانہ بنایا گیا ہے اور تین فوجی زخمی ہوئے ہیں۔ شام کا کہنا ہے کہ بیشتر میزائلوں کو فضا میں ہی تباہ کر دیا گیا تھا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -