یامی گوتم نے اپنی شادی اور محبت پر خاموشی توڑ دی

یامی گوتم نے اپنی شادی اور محبت پر خاموشی توڑ دی

  

ممبئی (این این آئی)بولی وڈ اداکارہ و ماڈل یامی گوتم یوں تو بھارت اور پاکستان کے ٹی وی چینلز پر زیادہ تر لڑکیوں کو خوبصورتی بڑھانے کے مشورے دیتی نظر آتی ہیں۔خوبصورتی بڑھانے کے لیے بیوٹی کریم کے استعمال کا مشورہ دینے والی یمی گوتم اگرچہ شاہد کپور اور اجے دیوگن جیسے اداکاروں کے ساتھ بھی فلمیں کر چکی ہیں۔تاہم انہیں زیادہ شہرت ان کی ماڈلنگ اور بیوٹی کریم کی تشہیر سے ملی۔

یمی گوتم ان دنوں آنے والی فلم’ ’اڑی‘‘ کی شوٹنگ میں مصروف ہیں، جس میں وہ بھارتی خفیہ ایجنسی کی افسر کا کردار ادا کرتی نظر آئیں گی۔تاہم بولی وڈ میں ان دنوں شادیوں اور محبت کا سیزن بھی چل رہا ہے اور دیگر اداکاراؤں کی طرح انہوں نے بھی اپنی شادی اور محبت پر خاموشی توڑ دی۔یمی گوتم کا کہنا تھا کہ اس سال بولی وڈ میں بہت ساری شادیاں ہوئیں اور کیلینڈر شخصیات کی شادیوں سے بھرا نظر آیا، جس کا مطلب یہ ہے کہ رواں سال میڈیا کافی مصروف رہا۔یمی گوتم کے مطابق ان کا فوری شادی کرنے کا کوئی ارادہ نہیں اور نہ ہی وہ اس وقت کسی کے ساتھ تعلقات میں ہیں۔انہوں نے واضح کیا کہ وہ ابھی تک تنہا ہیں اور وہ اس وقت ہی تعلقات میں ہوں گی، جب وہ شادی کریں گی، تاہم فوری طور پر ان کا شادی کا ارادہ نہیں۔اگرچہ اداکارہ نے فوری طور پر شادی کے امکان کو مسترد کیا، تاہم انہوں نے یہ نہیں بتایا کہ وہ کب تک شادی کا ارادہ رکھتی ہیں۔یمی گوتم نے انٹرویو میں جہاں خود کو تنہا قرار دیا، وہیں ماضی میں ان کا نام ساتھی اداکار پلکت سمرن کے ساتھ جوڑا جاتا رہا ہے۔یمی گوتم اور پلکت سمرن نے ایک ساتھ صنم رے فلم میں کام کیا تھا اور اسی دوران ان کے درمیان تعلقات استوار ہوئے۔بھارتی میڈیا کے مطابق ان دونوں کی قربت کی وجہ سے ہی پلکت سمرن کی شادی ناکام ہوئی اور انہوں نے شادی کے محض ایک سال کے اندر ہی اپنی اہلیہ شویتا روہڑا کو طلاق دی۔پلکت سمرن کی طلاق کے بعد اگرچہ ان کی بیوی نے اس کا سبب یمی گوتم کو قرار دیا تھا، تاہم یمی گوتم نے ان کے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا تھا کہ ان کا پلکت سمرن سے کوئی تعلق نہیں۔اگرچہ تاحال پلکت سمرن اور یمی گوتم نے اپنے تعلقات کا اعتراف نہیں کیا، تاہم بھارتی میڈیا کے مطابق دونوں کے تعلقات قائم ہیں اور ممکنہ طور پر دونوں شادی کرنے کا بھی ارادہ رکھتے ہیں، تاہم اس حوالے سے کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہے۔

مزید :

کلچر -