ہسپتالوں کی ری ویمپنگ کا کام مقررہ مدت میں مکمل کیا جائے،یاسمین راشد

ہسپتالوں کی ری ویمپنگ کا کام مقررہ مدت میں مکمل کیا جائے،یاسمین راشد

  

لاہور(جنرل رپورٹر)وزیر صحت پنجاب پروفیسر ڈاکٹر یاسمین راشدنے ہدایت کی ہے کہ ہسپتالوں کی ری ویمپنگ کا کام مقررہ مدت کے اندر مکمل کیا جائے۔ ہیلتھ افسر رات کے وقت بنیادی اور دیہی مراکز صحت کی حاضریاں لازمی چیک کریں۔ وہ ایک اعلیٰ سطحی اجلاس کی صدارت کر رہی تھیں جس میں سیکرٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ، ڈی جی ہیلتھ پنجاب، ایڈیشنل سیکرٹری سمیت دیگر نے بھی شرکت کی۔ اجلاس میں ہسپتالوں کی ری ویمپنگ اور محکمہ صحت کے پیرامیڈیکل سٹاف کی تربیت کے امور پر غور کیا گیا۔ وزیر صحت نے کہا کہ پیرامیڈیکل سٹاف کی تربیت کے لئے اچھے ماہرین کا انتخاب کیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ محکمہ صحت کی جدید خطوط پر تربیت کا عمل مسلسل جاری رہنا چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ ضلعی اور تحصیل ہسپتالوں کی ایمرجنسیوں میں تمام سہولیات مہیا کی جا رہی ہیں۔ سرد موسم کے پیش نظر مریضوں اور ان کے لواحقین کے لئے ضروری انتظامات لازمی کئے جائیں۔ انہوں نے سختی سے ہدایت کی کہ ایمرجنسی میں آنے والے ڈیلیوری کیسز کو آگے ریفر کرنے سے گریز کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ اضلاع سے بڑے ہسپتالوں کو بلاوجہ مریض ریفر کرنے کی روایت کی حوصلہ شکنی ہونی چاہیئے۔ اس موقع پر سیکرٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ نے پانچ اضلاع میں ماں بچہ ہسپتالوں کی تعمیر کے منصوبے پر بھی بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ متعلقہ ضلعی انتظامیہ کو اراضی کی نشاندہی کی ہدایت کر دی گئی ہے۔ ماں بچہ ہسپتال ایسے مقامات پر بنائے جائیں گے جہاں اہل علاقہ کی با آسانی رسائی ممکن ہوسکے۔ ڈاکٹر یاسمین راشد نے بریفنگ پر اظہار اطمینان کرتے ہوئے کہا کہ ماں بچہ ہسپتالوں کے لئے فنڈز میں کمی نہیں آنے دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پول میں موجود اینستھیزیا ماہرین کو ان ہسپتالوں میں بھیجا جا رہا ہے جہاں ان کی کمی ہے۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ مزید اینستھیزیا ماہرین کی تربیت کا کام بھی تیزی سے مکمل کیا جائے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -