جڑانوالہ ، ڈاکوؤں کی فائرنگ سے وکیل قتل ، وزیر اعلٰی نے رپورٹ طلب کر لی

جڑانوالہ ، ڈاکوؤں کی فائرنگ سے وکیل قتل ، وزیر اعلٰی نے رپورٹ طلب کر لی

  

جڑانوالہ ،فیروزوالہ،شرقپور شریف (نمائندہ پاکستان،نامہ نگار، سٹی رپورٹر)ڈاکوؤں نے مزاحمت پرفائرنگ کر کے جڑانوالہ سے تعلق رکھنے والے ایک وکیل ہلاک کردیا،وزیراعلیٰ پنجاب ، آئی جی پنجاب کا نوٹس ، واقعہ کی رپورٹ طلب کر لی۔ پولیس روایتی کارروائی میں مصروف کسی واردات کا سراغ نہ لگاسکی ۔ لوگوں کاڈکیتی کی بڑھتی وارداتوں پراحتجاج۔ تفصیلات کے مطابق جڑانواہ کارہائشی سابق پراسیکیوٹر اور سینئروکیل چوہدری غلام قادرباری کارمیں جڑانوالہ سے لاہورآرہے تھے منڈیانوالہ کے قریب ڈاکووں نے روک کرلوٹنے کی کوشش کی۔ مزاحمت پرڈاکوؤں نے فائرنگ کرکے غلام قادرباری کوہلاک کردیا اور فرار ہو گئے۔قتل کی خبر پورے شہر میں جنگل میں آگ کی طرح پھیل گئی اور عوام کا جم غفیر آبائی رہائش گاہ پر امڈ آیا۔ مقتول غلام قادر باری تحریک پاکستان کے رہنما عبدالباری کے پوتے ، میاں غلام دستگیر باری کے بیٹے ،سابق ایم پی اے میاں غلام حیدر باری کے بڑے بھائی، میجر (ر) معین باری کے بھتیجے تھے۔ مقتول وکیل چوہدری غلام قادرباری کو نماز جنازہ کے بعد آبائی گاؤں چک نمبر 22گ ب کے قبرستان میں سپرد خاک کر دیا گیا۔نماز جنازہ میں سابق ایم این اے طلال چودھری ، ایم این اے ملک نواب شیر وسیر ، چودھری افضل ساہی، چودھری علی تراب، رانا زاہد توصیف، میجر (ر) عبدالرحمن رانا ، آفتاب اکبر چودھری، ملک شاہد اقبال اعوان، ملک ظفر اقبال کھوکھر، چیئرمین بلدیہ شیخ حبیب الرحمن، چیف آفیسر چودھری غفور کموکا، رائے شاہجہان، اجمل چیمہ صوبائی وزیر ، میاں ابو بکر حمزہ سمیت مذہبی، سیاسی ، تاجر تنظیموں ، وکیل برادری نے ہزاروں کی تعداد میں شرکت کی۔ واقعہ پر وزیراعلیٰ پنجاب اور آئی جی پنجاب نے مقتول کے قتل کا نوٹس لیتے ہوئے رپورٹ طلب کر لی ہے اور واقعہ میں ملوث ملزمان کی گرفتاری کا حکم دے دیا ہے ۔ ذرئع کے مطابق ڈی پی او ننکانہ صاحب نے چھاپہ مار ٹیمیں تشکیل دے دی ہیں۔ مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کے لیے قل خوانی آج صبح 10بجے ان کی رہائش گاہ باری ہاوس واقع سٹیڈیم روڈ پر ادا ہوگی۔ علاوہ ازیں معلوم ہوا ہے کہ انہی ڈاکوؤں نے ایک دولہا کی کار سمیت متعدد گاڑیوں کو روک کر لوٹا اور مزاحمت پر کوٹ عبدالمالک کے رہائشی کارسوار وقاص کو تشدد کا نشانہ بنا کر شدید زخمی کیا اور نین سکھ کے قریب ایک کار سوار فیملی پر فائرنگ بھی کی جو معجزانہ طو رپر محفوظ رہے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -