کرک میں گیس پریشر میں کمی کیخلاف احتجاج بلا آخر رنگ لے آیا

کرک میں گیس پریشر میں کمی کیخلاف احتجاج بلا آخر رنگ لے آیا

  

کرک (بیورورپورٹ) نوشپہ آئل فیلڈ کے ملحقہ علاقوں کے عوام نے گیس پریشر میں کمی کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے سوئی نادرن حکام کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کر دیا ، آئل فیلڈ کے سامنے مظاہرین کا دھرنا ، کمپنی کی لاجسٹک سپلائی معطل کروانے سمیت تمام ویلز تک جانیوالی سڑکیں بھی بند کر دیں گئیں ، ضلعی انتظامیہ سے کامیاب مذاکرات کے نتیجے میں گیس پریشر بڑھانے پر مظاہرین منتشر ہو گئے تفصیلات کے مطابق نوشپہ آئل فیلڈ کے ملحقہ دیہات الواڑگی بانڈہ ، چنڈ ہ منزئی اور سلہونئے بانڈہ کے ہزاروں عوام نے گذشتہ روز الواڑگی بانڈہ کے مقام پر جمع ہو کر گیس پریشر میں کمی کے خلاف احتجاج کیا علاقائی مشران صوبیدار (ر) زر ولی خان ، صوبیدار (ر) دولت میر ، روشنائی گل ، عزیز خان اور میر شاہ علم خان نے مظاہرین کی سربراہی کی جبکہ بعد میں یونین کونسل جندری کے ضلعی کونسلر جان عالم ایڈووکیٹ نے بھی مظاہرین کا ساتھ دیا سوئی نادرن حکام کی جانب سے بار بار کی وعدہ خلافی پر مظاہرین نے مشتعل ہو کر نوشپہ آئل فیلڈ کے مین گیٹ کے سامنے دھرنا دیا اور اطراف کے تمام ویلز تک جانیوالی سڑکیں بھی بلدک کردی جس سے کمپنی کی لاجسٹک سپلائی معطل ہونے ساتھ ساتھ نقل و حمل بند ہو گیا ضلعی انتظامیہ نے احتجاج ختم کرنے کیلئے مظاہرین سے مذاکرات کیئے تاہم انہوں نے گیس پریشر بڑھنے کی صورت میں احتجاج ختم کرنے اعلان کیا جس پر سوئی نادرن گھٹنے ٹیکتے ہوئے شام گئے علاقے میں گیس پریشر بڑھا دیا ۔مظاہرین نے خبر دار کیا ہے کہ سوئی نادرن نے دوبارہ وعدہ خلافی کی اور چند روز گذرنے کے بعد گیس پریشر کم کروایا تو اس کے بعد انڈس ہائی وے بند کرکے احتجاج کرینگے جس کی تمام تر ذمہ دار ی سوئی نادرن کے حکام پر عائد ہو گی ۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -