پاکپتن درباراراضی کیس، خالق دادلک کی جے آئی ٹی کی سربراہی سے معذرت،نئی جے آئی ٹی تشکیل

پاکپتن درباراراضی کیس، خالق دادلک کی جے آئی ٹی کی سربراہی سے معذرت،نئی جے ...
پاکپتن درباراراضی کیس، خالق دادلک کی جے آئی ٹی کی سربراہی سے معذرت،نئی جے آئی ٹی تشکیل

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکپتن درباراراضی سے متعلق تحقیقاتی کمیٹی کے سربراہ خالق دادلک نے جے آئی ٹی کی سربراہی سے معذرت کر لی جس پر سپریم کورٹ نے ڈی جی اینٹی کرپشن ڈاکٹر حسین اصغرکو جے آئی ٹی کا سربراہ مقررکردیا۔عدالت نے نئی جے آئی ٹی کو 10روز میں ٹی او آرز دینے کی ہدایت کردی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکپتن درباراراضی سے متعلق تحقیقات کیلئے بنائی گئی جے آئی ٹی تبدیل کردی ،ڈی جی نیکٹا خالق دادلک نے ذاتی وجوہات کی بنا پر جے آئی ٹی کی سربراہی سے معذرت کرلی،سپریم کورٹ نے ڈی جی اینٹی کرپشن ڈاکٹر حسین اصغرکو نیا سربراہ مقررکردیااور 10 روز میں ٹی او آرز دینے کی ہدایت کردی۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ ہے کہ بنچ نمبر ایک خالق دادلک کی معذرت کے حوالے سے حقائق سے اتفاق کرتا ہے، خالق داد کی معذرت حقائق پر مبنی ہے اس لئے دباؤ نہیں ڈال سکتے۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے نواز شریف کو سابق وزیراعلیٰ پنجاب کی حیثیت میں طلب کیا گیا تھا۔جے آئی ٹی میں آئی ایس آئی اور آئی بی کا ایک ایک رکن شامل ہو گا۔نواز شریف کے وکیل نے جے آئی ٹی کیلئے آمادگی ظاہر کی تھی۔

مزید :

قومی -علاقائی -پنجاب -لاہور -