وزیراعلیٰ سندھ کو ریفرنس دائر ہونے سے پہلے ہی استعفیٰ دے دینا چاہئے، معاون خصوصی برائے احتساب

وزیراعلیٰ سندھ کو ریفرنس دائر ہونے سے پہلے ہی استعفیٰ دے دینا چاہئے، معاون ...
وزیراعلیٰ سندھ کو ریفرنس دائر ہونے سے پہلے ہی استعفیٰ دے دینا چاہئے، معاون خصوصی برائے احتساب

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب بیرسٹر شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کو ریفرنس دائر ہونے سے قبل ہی مستعفی ہوجانا چاہئے ،جے آئی ٹی کے اندر بہت زیادہ مواد ہے جس سے انکار نہیں کیا جا سکتا، جے آئی ٹی کی جانب سے 16 ریفرنسز کی تجویز دی گئی ہے۔

دنیا نیوز کے پروگرام ”دنیا کامران خان کے ساتھ“ میں گفتگو کرتے ہوئے بیرسٹر شہزاد اکبر نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو بڑے معصوم ہیں، انھیں تاریخ کو اچھی طرح پڑھ لینا چاہئے، ان کو نئی اور پرانی تاریخ یاد نہیں ۔ انہوں نے پرویز کے دور کا احتساب نہیں دیکھا،اس دورمیں ان کو این آر او مل گیا تھا، نواز شریف کے دور کا احتساب بلاول بھٹو زرداری نے دیکھا تھا۔انہوں نے کہا کہ جے آئی ٹی سپریم کورٹ کے حکم پر بنی جس کی رپورٹ نے زرداری سسٹم کو عیاں کیا۔ سابق صدر کے کیخلاف کیس 2015میں بنا لیکن الزام ہم پر لگایا جا رہا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ جے آئی ٹی کے اندر بہت زیادہ مواد ہے جس سے انکار نہیں کیا جا سکتا، جے آئی ٹی نے 16 ریفرنسز دائر کرنے کی تجویز دی ہے، اخلاقی طور پر مراد علی شاہ کو ریفرنس دائر ہونے سے سے پہلے ہی مستعفی ہو جانا چاہیے۔ معاملہ عدالت میں ہے، حکومت کا اس میں کوئی رول نہیں ہے۔ ہم تو پیر تک عدالت کی کارروائی کا انتظار کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ اطلاعات تھیں کچھ لوگ بیرون ملک جا سکتے ہیں، اس لئے حکومت کے پاس ان کے نام ای سی ایل میں نام ڈالنے کے علاوہ کوئی آپشن نہیں رہ گیا تھا ، ایسی حرکتوں کی وجہ سے ہی پاکستان کانام گرے لسٹ میں شامل کیاگیا ہے ۔

مزید :

قومی -