شاہ سلمان کے حکم پر سعودی کابینہ میں بڑے پیمانے پرتبدیلیاں،ولی عہدمحمد بن سلمان کا کیا بنا ؟بڑی خبر آگئی

شاہ سلمان کے حکم پر سعودی کابینہ میں بڑے پیمانے پرتبدیلیاں،ولی عہدمحمد بن ...
شاہ سلمان کے حکم پر سعودی کابینہ میں بڑے پیمانے پرتبدیلیاں،ولی عہدمحمد بن سلمان کا کیا بنا ؟بڑی خبر آگئی

  

ریاض(ڈیلی پاکستان آ ن لائن )سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز کے حکم پر کابینہ میں بڑے پیمانے پرتبدیلیاں کردی گئیں۔ شاہی فرمان کے مطابق کابینہ میں رد و بدل کے باوجود محمد بن سلمان بدستور ملک کے وزیر دفاع کے منصب پہ فائز رہیں گے۔نجی نیوز چینل ہم نیو ز کے مطابق سابق سعودی وزیر خزانہ ابراہیم العساف کو وزارت خارجہ کی باگ ڈورسونپ دی گئی ہے جبکہ وزیر خارجہ عادل الجبیر کی تنزلی کرکے انہیں وزیر مملکت برائے خارجہ کا منصب سونپ دیا گیا ہے۔

ترکی الشبانہ کا تقرر بطور وزیر اطلاعات کیا گیا ہے جو اَواد الاَواد کی جگہ وزارت کا قلمدان سنبھا لیں گے۔ سبکدوش ہونے والے وزیراطلاعات کو شاہی عدالت کے مشیر کی نئی ذمہ داری تفویض کی گئی ہے۔شاہ سلمان کے صاحبزادے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے قریبی ساتھی ترکی الشیخ کو سلطنت کے سپورٹس کمیشن کی سربراہی سے ہٹا کر انٹرٹینمنٹ اتھارٹی کا سربراہ مقررکردیا گیا ہے۔۔ عسیر کے گورنر فیصل بن خالد کو عہدے سے ہٹا کر ان کی جگہ ترکی بن طلال کو نیا گورنر مقرر کیا گیا ہے۔ اسی طرح صوبہ الجوف کے گورنر بدر بن سلطان کی جگہ فیصل بن نواف کو نیا گورنر نامزد کیا گیا ہے۔

عبداللہ بن بندر بن عبد العزیز کو نیشنل گارڈز کا وزیر مقرر کیا گیا ہے جب کہ کابینہ کے وزیر مساعد العیبان کو قومی سلامتی کا مشیر مقرر کیا گیا ہے۔ جنرل خالد بن کرار کو سعودی عرب کی جنرل سیکیورٹی کا نیا سربراہ تعینات کر دیا گیا ہے۔شہزادہ محمد بن نواف بن عبدالعزیز کو برطانیہ میں سفارتکاری کے منصب سے سبکدوش کرکے خادم الحرمین الشریفین کا مشیر مقرر کیا گیا ہے۔شہزادہ سلطان بن سلمان بن عبدالعزیز کو سعودی بورڈ برائے فضائی علوم کے کونسل کا چیئرمین مقرر کیا گیا ہے۔

مزید :

عرب دنیا -