نیشنل کمیشن فارہیومن ڈیویلپمنٹ، 2ہزار خوا ندگی مراکز قائم کئے جائینگے، ڈاکٹر امیر اللہ

نیشنل کمیشن فارہیومن ڈیویلپمنٹ، 2ہزار خوا ندگی مراکز قائم کئے جائینگے، ...

  



چارسدہ(بیو رو رپورٹ) این سی ایچ ڈی پاکستان کے چیئرمین کرنل (ر) ڈاکٹر امیراللہ مروت نے کہا ھے کہ نیشنل کمیشن فارہیومن ڈیولپمنٹ کے تحت پورے پاکستان میں 2 ہزار خواندگی مراکز قائم کئے جا رہے ہیں۔جس میں 50 ہزار ناخواندہ خواتین کو خواندہ بنا کر انہیں زندگی کی مہارتیں سکھا کر گھر کے اندر آمدن کمانے کے قابل بنانا ھے۔اس کیلئے ان مراکز کے اساتذہ پر بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہیں۔وہ چارسدہ میں این سی ایچ ڈی کے لیٹریسی پروگرام کے افتتاح کے موقع پر خطاب کر رہے تھے۔اس موقع پر انہوں نے خواتین اساتذہ کو تقررنامے دے کر ان کے تر بیتی ورکشاب کا باقاعدہ افتتاح بھی کیا۔تقریب میں این سی ایچ ڈی کے پراونشل ڈائریکٹر انور اقبال۔ڈی ای او چارسدہ جہانگیر خان کاکڑ اور ڈپٹی دائریکٹر طاہر شریف۔شہزاد ھمایون۔شمس الزمان اور اظہار علی بھی موجود تھے۔این سی ایچ ڈی چئیرمین نے واضح کیا کہ ناخواندگی کا خاتمہ کئے بغیر روشن پاکستان کا مستقبل ناممکن ھے۔امیراللہ مروت نے کہا کہ تعلیم یافتہ قومیں دنیا میں بام عروج پر پہنچ چکی ہیں۔جبکہ وطن عزیز کے موجودہ صورتحال میں خواندگی کی کم شرح پر قابو پانے کیلئے ہر شحص کو اپنا کردار ادا کرنا چاہئے۔انہوں نے کہا کہ جب تک ہم ناخواندگی کا خاتمہ نہ کریں۔اس وقت تک ترقی کے شاہراہ پر گامزن نہیں ہو سکتے۔انہوں نے خواتین اساتذہ پر زور دیا کہ وہ ناخواندگی کے تاریکیوں کا خاتمہ کرنے کیلئے جنگی بنیادوں پر کام کریں۔اور اس ڈیوٹی کو اپنی زندگی کا نصب العین بنائیں۔انہوں نے کہا کہ ضلع چارسدہ کی موجودگی آبادی اور خواندگی کی شرح کو دیکھ کر کہا جا سکتا ھے۔کہ صرف چارسدہ میں 26 ہزار خواندگی مراکز قائم کرنے چاہئیے۔جو دستیاب وسائل سے ممکن نہیں۔لیکن پھر بھی این سی ایچ ڈی اس حوالے سے بھر پور کوشیش کر رہی ھے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر