پبی،پولیس کی کارروائی،کروڑوں کی ادویات برآمد،1 گرفتار

  پبی،پولیس کی کارروائی،کروڑوں کی ادویات برآمد،1 گرفتار

  



پبی (نما ئندہ پاکستان)نوشہرہ پولیس کی بڑی کامیاب کاروائی۔غریب عوام کو مفت دی جانے والی کروڑوں روپے مالیت کی ادویات برآمد۔ملزم گرفتار۔مزدا گاڑی قبضہ اور گودام سیل کر دیا گیا۔ ادویات کو نجی میڈیکل سٹوروں میں فروخت کے لئے لائی گئی تھی ادویات کی مقدار دس ٹرک سے زائد ہیں ڈرگ انسپکٹر خوشحال خان ذکریا خان اے ایس آئی تھانہ اضاخیل معمول کی گشت پر تھے۔کہ کسٹم آفس کے قریب ایک مزدا میں ادویات کو لوڈ کرتے ہوئے دیکھا۔چونکہ وہاں نہ ہی کوئی ہسپتال یا میڈیکل سٹور تھا۔جس پر انہیں شک ہوامزدا ڈرائیور سے ادویات کے بارے میں سرسری معلومات کی۔ادویات کے کاٹن کو چیک کیا جو کہ گورنمنٹ آف پنجاب کی ملکیت تھی۔جوکہ سرکاری ہسپتالوں میں غریب مریضوں کو مفت دی جاتی ہے۔جس پر فوری طور پر اپنے سنیئرز افسران کو مطلع کیا گیا۔خالد خان ڈی ایس پی پبی،مختیار خان ایس ایچ اواضاخیل ڈرگ انسپکٹر نو شہرہ خوشخال خان اور افسران فوراً جائے وقوعہ پہنچ گئے۔ڈرگ انسپکٹرخوشخا ل خان نے اس بات کی تصدیق کر دی کہ یہ دوائی غیر قانونی طریقے سے پنجاب سے سمگل کرکے یہاں مارکیٹ میں بھچنی تھی۔ڈرگ انسپکٹر کی موجودگی میں پولیس نے گودام کی تلاشی لی۔جسمیں دو کمرے ادویات سے بھری ہوئی تھی۔ادویات میں مختلف کمپنیوں کے مختلف قسم کے ادویات شامل ہیں۔ڈرائیور کو گرفتار کرکے سرسری انٹارگیٹ کرنے پر معلوم ہوا کہ وہ یہ ادویات پشاور لے جا رہے تھے۔مزدا گاڑی کو قبضہ پولیس کرکے گودام کو سیل کر دیا گیا۔محکمہ صحت کے افسران نے پولیس کی اس کارکردگی کی کھلے الفاظ میں تعریف کی۔خالد خان ڈی ایس پی پبی نے کہا کہ گودام کے مالک کی گرفتاری کیلئے ٹیمیں تشکیل دے دی گئی۔مذید تفتیش جاری ہے تاکہ پتہ لگایا جا سکا کہ اس سکینڈل میں کون کون ملوث ہیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر