سنٹرل پنجاب اور ناردرن کے مابین قائد اعظم ٹرافی کا فائنل آج شروع ہوگا

    سنٹرل پنجاب اور ناردرن کے مابین قائد اعظم ٹرافی کا فائنل آج شروع ہوگا

  



لاہور(سپورٹس رپورٹر)سر ی لنکا کے خلاف تاریخی سیریز میں شاندار کامیابی کے بعد قومی اسٹارز قائد اعظم ٹرافی کے فائنل میں جلوہ گر ہوں گے،ایونٹ کا فائنل سنٹرل پنجاب اور ناردرن کے مابین (آج)27دسمبر سے نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں شروع ہوگا۔فائنل میں قومی ٹیسٹ ٹیم کے کپتان اظہر علی اورمڈل آرڈر بیٹسمین بابر اعظم سنٹرل پنجاب کی نمائندگی کریں گے،دوسری طرف قومی انڈر 19 کرکٹ ٹیم کے کپتان روحیل نذیر اور اوپنر حیدر علی ناردرن کیا سکواڈ کا حصہ ہیں۔پاکستان کیپریمیر کرکٹ ٹورنامنٹ کا فائنل پانچ روز تک جاری رہے گاجو27 سے 31 دسمبر تک نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں کھیلا جائے گا۔ فائنل میں کامیابی حاصل کرنے والی ٹیم نہ صرف پی سی بی کے ازسر نو ترتیب دئیے گئے ڈومیسٹک اسٹرکچر کے پریمیئر ٹورنامنٹ کی پہلی فاتح ہوگی بلکہ وہ چمچماتی ٹرافی کی حقدار بھی ٹھہرے گی۔ٹورنامنٹ کی فاتح ٹیم کو ایک کروڑ روپے اور رنرزاپ کوپچاس لاکھ روپے کی انعامی رقم دی جائے گی۔قائداعظم ٹرافی میں سنٹرل پنجاب اور ناردرن کا سفر انتہائی دلچسپ رہا۔ اس دوران پوائنٹس ٹیبل پر دونوں ٹیموں کے درمیان صرف تین پوائنٹس کا فرق رہا۔آخری راؤنڈ کے اختتام پر سنٹرل پنجاب 133 پوائنٹس کے ساتھ پوائنٹس ٹیبل پر پہلے جبکہ ناردرن 130 پوائنٹس کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہی۔فائنل میں ناردرن کی ٹیم راؤنڈ میچز میں شکست کا بدلہ لینے کے لیے بے قرار ہوگی کیونکہ اس سے قبل دونوں ٹیمیں 2 مرتبہ ایونٹ میں ایک دوسرے کے مدمقابل آچکی مگر دونوں میچوں میں فتح کی دیوی سنٹرل پنجاب پر مہربان رہی ہے۔27دسمبر سے شروع ہونے والا ایونٹ کااہم ترین مقابلہ ٹین اسپورٹس اور پی ٹی وی اسپورٹس پر براہ راست نشر کیا جائے گا۔

سنٹرل پنجاب کو ایونٹ کے دس میں سے تین میچوں میں کامیابی اور ایک میں شکست کا سامنا کرنا پڑا جبکہ پوائنٹس ٹیبل پر پہلی پوزیشن پر براجمان، سنٹرل پنجاب کی ٹیم کے باقی چھ میچز بے نتیجہ ختم ہوئے۔ایونٹ کے آغاز سے ہی سنٹرل پنجاب کی کارکردگی میں تسلسل دیکھا گیا۔پنجاب ڈربی میں اپنے سفر کا آغاز ڈرا سے کرنے والی سنٹرل پنجاب کی ٹیم نے اگلے دو راؤنڈز میں فتوحات حاصل کرنے کے بعد پوائنٹس ٹیبل پر اپنی گرفت مضبوط کرلی جو آخری راؤنڈ تک برقرار رہی۔اقبال سٹیڈیم فیصل آباد میں کھیلے گئے میچ میں سنٹرل پنجاب نے ناردرن کو ایک اننگز اور ایک سو رنز کے بھاری مارجن سے شکست دینے کے بعد اگلے ہی میچ میں بلوچستان کو ہرا دیا۔ تیسرے راؤنڈ میں سنٹرل پنجاب نے اپنے ہوم گراونڈ میں ایک اننگز اور 12 رنز سے کامیابی حاصل کی تھی۔فیصل آباد میں کھیلے گئے ساتویں راؤنڈ کے میچ میں سنٹرل پنجاب نیایک بار پھر ناردرن کو 205رنز کے بھاری مارجن سے شکست دے دی۔راؤنڈ میچز میں سنٹرل پنجاب کو واحد ناکامی کا سامنا اس وقت کر نا پڑاجب این بی پی ا سپورٹس کمپلیکس کراچی میں کھیلے گئے میچ میں خیبر پختونخواہ نے سنٹرل پنجاب کو211 رنز سے شکست دی۔بیٹنگ میں سنٹرل پنجاب کی جانب سے نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والوں میں کامران اکمل اور سلمان بٹ کے نام سرفہرست ہیں۔ دونوں کھلاڑی ایونٹ میں سب سے زیادہ رنز بنانے والے بلے بازوں کی فہرست میں بھی بالترتیب دوسرے اور چوتھے نمبر پر موجود ہیں۔ کامران اکمل نے 14 اننگز میں 61.79 کی اوسط سے 865 رنز بنائے جس میں تین سنچریاں اور تین نصف سنچریاں بھی شامل ہیں۔ 38 سالہ تجربہ کار وکٹ کیپر بیٹسمین نے نہ صرف بیٹنگ میں زبردست کارکردگی کامظاہرہ کیابلکہ وہ وکٹوں کے پیچھے 35شکار کرکے ٹورنامنٹ کے بہترین وکٹ کیپرز کی دوڑ میں بھی سب سے آگے ہیں۔

بائیں ہاتھ کے بلے باز سلمان بٹ تین سنچریوں اور دو نصف سنچریوں کی بدولت75.18کی اوسط سے 827 رنز جوڑچکے ہیں۔ وہ ایونٹ میں ایک ڈبل سنچری بھی اسکو کرچکے ہیں۔سنٹرل پنجاب کی باؤلنگ پر نظر ڈالی جائے تو ظفر گوہر اور بلال آصف ایونٹ میں سب سے زیادہ وکٹیں حاصل کرنے والے کھلاڑیوں کی فہرست میں بالترتیب دوسرے اور تیسرے نمبر پر موجود ہیں،ظفر گوہر نے ٹورنامنٹ میں 38 وکٹیں حاصل کیں جبکہ بلال آصف تاحال 32 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھا چکے ہیں۔اس موقع پر سنٹرل پنجاب کے کپتان بابر اعظم کا کہنا ہے کہ قائداعظم ٹرافی ملک کا سب سے اہم اور پریمیئرکرکٹ ٹورنامنٹ ہے جسے قومی ٹیسٹ کرکٹرز کی نرسری کہا جائے تو غلط نہیں ہوگا۔بابراعظم نے کہا کہ سنٹرل پنجاب کی ٹیم فائنل میں شاندار کارکردگی کا تسلسل برقرار رکھنے کی کوشش کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ نیشنل ڈیوٹی کیباعث وہ کچھ میچوں میں شرکت نہیں کرسکے تاہم سنٹرل پنجاب کی فائنل میں رسائی پر وہ بہت خوش ہیں۔کپتان سنٹرل پنجاب کا کہنا ہیکہ مضبوط بیٹنگ لائن اپ، ٹیم کی طاقت ہے اور وہ انفرادی طور پر فائنل میں لمبی اننگز کھیلنے کے لیے پراعتماد ہیں۔ انہوں نے امید ظاہرکی ہیکہ شائقین کرکٹ کو دونوں ٹیموں کے درمیان بہترین مقابلہ دیکھنے کو ملے گا۔ایونٹ میں ناردرن کا آغاز قدرے سستی روی کا شکار رہا۔ ٹورنامنٹ کا نصف حصہ گزر جانے تک ناردرن کی ٹیم آخری پوزیشن پر موجود تھی تاہم چھٹے راؤنڈ میں بہترین کھیل کا مظاہرہ کرکے شاندار واپسی کرنے والی ناردرن کی ٹیم نے دسویں راؤنڈ کے اہم میچ میں کامیابی سمیٹ کر ایونٹ کے فائنل میں رسائی حاصل کرکے سب کو حیران کردیا۔ناردرن نے ایونٹ میں پہلی کامیابی سندھ کے خلاف حاصل کی، جس کے بعد نویں اور دسویں راؤنڈز میں بالترتیب بلوچستان کے خلاف آٹھ وکٹو ں سے فتح اور خیر پختونخواہ کے خلاف یو بی ایل سپورٹس کمپلیکس میں 39 رنز سے کامیابی کی بدولت ناردرن نے پوائنٹس ٹیبل پر دوسری پوزیشن حاصل کی۔ناردرن کے کپتان نعمان علی ٹورنامنٹ میں سب سے زیادہ وکٹیں حاصل کرنے والے باؤلرز کی فہرست میں سب سے آگے ہیں۔وہ 22.85 کی اوسط سے 52 وکٹیں حاصل کرکیاپنی ٹیم کے لیے ترپ کا پتہ ثابت ہوئے ہیں۔ وہ ٹورنامنٹ میں متعدد مرتبہ پانچ وکٹیں حاصل کرنے کا منفرد کارنامہ بھی سرانجام دے چکے ہیں۔بیٹنگ پر نظر ڈالی جائیتو ناردرن کے نمایاں بلے باز ذیشان ملک اور فیضان ریاض رواں سیزن میں ڈبل سنچریاں اسکور کرچکے ہیں۔ذیشان ملک 55.85 کی اوسط سے 726 اور فیضان ریاض 719 رنزبناچکے ہیں۔ٹاپ آرڈر بیٹسمین عمر امین ناردرن کی جانب سے سب سے زیادہ اسکور کرنے والیبلے بازوں میں تیسرینمبر پر موجود ہیں۔ وہ دس میچوں میں ایک سنچری اور تین نصف سنچریوں کی بدولت 595 رنز بناچکے ہیں۔کپتان نعمان علی کا کہنا ہے کہ ناردرن کی ٹیم اس اہم میچ کے لیے مکمل طور پر تیار ہے، انہوں نے کہا کہ ٹیم میں شامل تمام کھلاڑی ایونٹ کے فائنل میں اعلیٰ کارکردگی کا تسلسل برقرار رکھنے کے لیے پراعتماد ہیں۔ ناردرن کے کپتان نے واضح کیا ہے کہ سنٹرل پنجاب کے خلاف میدان میں اترنے سے قبل ٹیم پر کوئی اضافی دباؤ نہیں۔انہوں نے کہا کہ دوران ٹورنامنٹ ٹیم کے متعدد میچز ہائی پریشر گیمز رہے لہٰذاوہ دباؤ سے نمٹنا بھی بخوبی جانتے ہیں۔کپتان ناردرن کرکٹ ٹیم نے کہا کہ ٹیم کی بیٹنگ لائن اپ نے ایونٹ میں نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایونٹ میں ڈبل سنچریاں اسکور کرنے والے ذیشان ملک اور فیضا ن ریاض پرمشتمل ٹاپ آرڈر کے بعد مڈل آرڈر میں حماد اعظم،عمر امین اور علی سرفراز کی موجود گی سے ٹیم کی بیٹنگ لائن اپ کو مزید تقویت ملے گی۔نعمان علی نے کہا کہ ٹورنامنٹ میں ان کی کارکردگی بہترین رہی ہے اوروہ بطور کپتان فائنل میں بھی باؤلنگ کیشعبے میں اپنی ٹیم کو فرنٹ سے لیڈ کرنے کے خواہ ہیں۔انہوں نے کہا کہ نوجوان فاسٹ باؤلر موسیٰ خان ایونٹ کے فائنل میں شرکت کریں گے، اس دوران ٹورنامنٹ میں نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے فاسٹ باؤلر وقاص احمد بھی ان کا ساتھ نبھانے کے لیے تیار ہیں۔کپتان ناردرن کرکٹ ٹیم کاکہنا ہیکہ ٹیم کو ان دونوں کھلاڑیوں سے بہت توقعات وابستہ ہیں تاہم اس دوران انہیں سہیل تنویر اور صدف حسین جیسے سینئر کھلاڑیوں کی معاونت بھی حاصل ہوگی۔انہوں نے کہا کہ ناردرن کرکٹ ٹیم، نوجوان اور تجربہ کار کھلاڑیوں کا ایک حسین امتزاج ہے، امید ہے ٹیم فائنل میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرے گی۔فائنل میں میچ ریفری کے فرائض افتخار احمد نبھائیں گے۔ میچ میں آن فیلڈ امپائرز کی ذمہ داریاں احسن رضا اور آصف یعقوب ادا کریں گے۔ راشد ریاض کو ٹی وی امپائراور طاہر رشیدکو ریزرو امپائرمقرر کیا گیا ہے۔ایونٹ کے بہترین بلے باز،باؤلر، وکٹ کیپر اور ٹورنامنٹ کے بہترین کھلاڑی کو پانچ، پانچ لاکھ روپے کی انعامی رقم د ی جائے گی،فائنل کے بہترین کھلاڑی کو پچاس ہزار روپے کا انعام دیا جائے گایاد رہے کہ ٹاس صبح ساڑھے نو بجے ہوگا اور میچ کا آغاز صبح دس بجے ہوگا۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی


loading...