ختم نبوت کا منکر کل بھی کافر تھا آج بھی کافر ہے، کوئی مسلمان قرار نہیں دے سکتا: نور الحق قادری

      ختم نبوت کا منکر کل بھی کافر تھا آج بھی کافر ہے، کوئی مسلمان قرار نہیں دے ...

  



لاہور (ڈویلپمنٹ سیل)وفاقی وزیر برائے مذہبی امور پیر نور الحق قادری نے کہاہے کہ عمران خان کے ہوتے ہوئے کوئی پاکستان کو نظریاتی اساس سے نہیں ہٹاسکتا،ختم نبوت کا منکر کل بھی کافر تھا اور آج بھی کافر ہے، کوئی نظام انہیں مسلمان قرار نہیں دے سکتا،حضور اکرمؐ کے نام پر قربان ہونا ہی آب حیات ہے،پاکستان کا وجود بھی اولیاء کرام کے فیضان سے ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کو دربارعالیہ گولڑہ شریف میں منعقدہ عالمی ختم نبوت کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا  کانفرنس میں بھارت کے شہر اجمیر شریف کے سجادہ نشین روف اجمیری شریف اور پاک پتن شریف کے جانشین دیوان احمد مسعود چشتی، مشیر وزیر اعظم زلفی بخاری،رہنما پیپلز پارٹی فیصل کریم کنڈی،پیر نظام الدین جامی سمیت علماء مشائخ اور مذہبی شخصیات کے ساتھ ساتھ شہریوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔گولڑہ شریف میں منعقدہ بین الاقوامی ختم نبوت کانفرنس میں حکومت کی جانب سے کئے گئے وعدوں کی تکمیل کے لے باقاعدہ قرار داد  بھی پیش کی گئی اس قرارداد میں کہاگیاہے کہ ریاست مدینہ کے قیام کو عملی شکل دینے کے لئے علماء مشایخ پر مشتمل ورکنگ گروپ تشکیل دی جائے،سودی نظام کو ختم کرنے کے لئے اسلامی معاشی نظام متعارف کرایا جائے،ختم نبوت کے عقیدے سے متعلق بہترین اقدامات اٹھائے جائیں۔قراردا کو سٹیج  پر پڑھ کر   شرکاء سے منظوری لی گئی۔ وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری کا کہنا تھاکہ حضور اکرمؐ کے نام پر قربان ہونا ہی آب حیات ہے،پاکستان کا وجود بھی اولیاء کرام کے فیضان سے ہے،وزیراعظم عمران خان کے ہوتے ہوئے کوئی پاکستان کو نظریاتی اساس سے نہیں ہٹاسکتا،ختم نبوت کا منکر کل بھی کافر تھا اور آج بھی کافر ہے، کوئی نظام انہیں مسلمان قرار نہیں دے سکتا،جو رسالت کا غلام ہو اسے بغیر جستجو اور تحقیق کے کافر، مرتد قرار نہیں دیا جاسکتا۔ معاون خصوصی ذولفی بخاری نے کانفرنس سے اپنے خطاب میں کہا کہ ہم فخر سے کہتے ہیں ہمارے وزیراعظم نے ختم نبوت اور ریاست مدینہ کی آواز اٹھائی،پوری دنیا کے سامنے تحفظ ختم نبوت کے لیے اقدامات بھی وزیراعظم نے تجویز کئے،حضور اکرم ؐ ہر مکتبہ فکر، ہر شعبہ زندگی اور پوری انسانیت  کے لئے بہترین نمونہ ہیں،اسلام تلوار سے نہیں بلکہ اولیائے کرام کی کاوشوں سے پھیلا، برصغیر میں مزارات اس کی بڑی مثال ہیں،پچھلے سال بھی مجھے اس کانفرنس میں شرکت کرنے کا موقع ملا،اس وقت کانفرنس میں نوجوان ایک بڑی تعداد میں موجود ہیں، نبی پاکؐ  کی ذات اقدس  ہمارے لئے مشعل راہ ہے۔پیر نظام الدین جامی نے کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پیر مہر علی شاہ ایسی عظیم شخصیت تھیں جن کا تعارف ہم یا کوئی اور نہیں بلکہ خود انکی تعلیمات ہیں،عوام کو چاہیئے کہ وہ گمراہ افراد اور مشائخ سے گریز کریں،ہم انتشار کے نہیں بلکہ اتفاق کے حامی ہیں۔

نور الحق قادری

مزید : صفحہ آخر