ملازمین االاؤنس کیس کی سماعت میں التوا مانگنے پر ڈپٹی اٹارنی جنرل کی سرزنش

  ملازمین االاؤنس کیس کی سماعت میں التوا مانگنے پر ڈپٹی اٹارنی جنرل کی سرزنش

  



اسلام آباد (آن لائن)سپریم کورٹ میں وزارت خزانہ کے ملازمین کے الاؤنس سے متعلق کیس کی سماعت، عدالت نے بغیر تیاری آنے پر ڈپٹی اٹارنی جنرل کی سرزنش کرتے ہوئے معاملے کی سماعت موسم سرما کی چھٹیوں کے بعد تک کے لئے ملتوی کر دی ہے۔ کیس کی سماعت چیف جسٹس کو سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کی۔دوران سماعت چیف جسٹس نے ڈپٹی اٹارنی جنرل اصغر علی کی طرف سے مقدمہ کی تیاری کے لیے التواء  مانگنے پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ریمارکس دئیے کہ سپریم کورٹ کو ہلکا نہ لیں، عدالت یہاں التواء  دینے کے لیے نہیں بیٹھی،ڈپٹی اٹارنی جنرل صاحب آپ نے ہم ججز پر ظلم کیا،ججز کیس کہ فائل پڑھ کر آتے ہیں،آپ لاء  آفیسر کیسے بن گئے،کیا آپ کو نوکری پر رکھا جا سکتا ہے۔ریونیو ڈویژن کو 100 فیصد اور آڈٹ اکاؤنٹ کو 20 فیصد الاؤنس کس قانون کے تحت دیا گیا۔فنانس،اکنامک اور ریونیو ڈویژن میں کیا فرق ہے۔ہر سرکاری ادارے کی تنخواہ دوسرے ادارے سے مختلف ہے،کیا سب سرکاری اداروں کی تنخواہ ایک کردیں،عدالت نے پر ڈپٹی اٹارنی جنرل کی طرف سے کیس کی تیاری کے لئے وقت مانگنے کی درخواست منظور کرتے ہوئے کیس کی سماعت موسم سرما کی چھٹیوں کے بعد تک کے لئے ملتوی کر دی ہے۔

ڈپٹی اٹارنی جنرل

مزید : صفحہ آخر