حکومت سے یکساں نظام تعلیم کی امید نہیں رکھی جا سکتی،یہ شوشہ ثابت ہو گا

حکومت سے یکساں نظام تعلیم کی امید نہیں رکھی جا سکتی،یہ شوشہ ثابت ہو گا

  



اے این پی کے مرکزی رہنما میاں افتخار حسین نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کے پی کے میں اس کشمکش کا شکار ہے کہ اس نے اس صوبے میں کونسا تعلیمی نظام لانا ہے جب وہ ایک صوبے میں ایسا نہیں کر سکے جہاں پر وہ اس سے پہلے بھی اقتدار میں رہے ہیں توان سے ملک بھر میں کسی بھی یکساں نظام تعلیم کی امید نہیں رکھی جا سکتی ہم یہ سمجھتے ہیں کہ یہ بھی ایک حکومتی سوشہ ہی ثابت ہو گا۔ایشو آف دی ڈے میں اظہار خیال کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ اگر واقعی حکومت مخلص ہے تو وہ سب جماعتوں کے ساتھ مشاورت شروع کرے ہم حکومت کا ساتھ دیں گے اور اس مقصد کے لئے اگر ساری جماعتوں میں اتفاق رائے پایا جائے گا تو پھر ہم بھی اپنی پارٹی کی رائے کا کھل کر اظہار کریں گے۔

میاں افتخار حسین

مزید : صفحہ اول