فری تجارتی معاہدوں سے بر آمدات پچاس ارب ڈالر تک پہنچ سکتی ہیں: لاہور چیمبر

  فری تجارتی معاہدوں سے بر آمدات پچاس ارب ڈالر تک پہنچ سکتی ہیں: لاہور چیمبر

  



لاہور(لیڈی رپورٹر)لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر عرفان اقبال شیخ، سینئر نائب صدر علی حسام اصغر اور نائب صدر میاں زاہد جاوید احمد نے حکومت  سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ مزید ممالک کے ساتھ آزادانہ تجارت کے معاہدے کرے اور موجودہ معاہدوں کو بات چیت کے ذریعے زیادہ سے زیادہ معیشت دوست بنائے،انہوں  نے یہ بات اپنے ایک بیان میں کہی، لاہور چیمبر کے عہدیداروں نے کہا کہ نئے ممالک کے ساتھ آزادانہ تجارت کے معاہدے برآمدات کو پچاس ارب ڈالر تک بڑھانے میں اہم کردار ادا کرسکتے ہیں، نئے ممالک کے ساتھ معاہدوں سے تجارت کی راہ میں حائل رکاوٹیں دور اور ملکی مصنوعات کو زیادہ سے زیادہ ممالک تک آسان رسائی حاصل ہوگی، انہوں نے کہا کہ قیمتی زرمبادلہ ملک میں لانے، صنعتی بنیاد کو وسعت دینے، روزگار کے نئے مواقع پیدا کرنے اور آمدن بڑھانے کیلئے پاکستان کو برآمدات  میں اضافہ  کرنے کی ضرورت ہے جو اس وقت مطلوبہ سطح سے کافی کم ہیں، انہوں نے کہا کہ برآمدات کی موجودہ صورتحال قومی وسائل سے مطابقت نہیں رکھتی، اعداد و شمار کے مطابق جولائی تا مارچ 2018-19ء کے دوران پاکستان کی برآمدات کا حجم 17,083ملین ڈالر رہا جو اس سے گذشتہ سال کے اسی عرصہ کے مقابلے میں صرف 0.11فیصد زائد ہے، انہوں نے کہا کہ نئے تجارتی معاہدوں پر پیش رفت ہوتے ہی برآمدات پر بہتر اثرات دیکھنے میں آئیں گے کیونکہ پاکستانی مصنوعات کو رعایات کے تحت نئی منڈیوں تک رسائی اور  موجودہ تجارتی معاہدوں کی مزید بہتری معاشی فوائد لائے گی۔

مزید : کامرس