ملکی معیشت کو پیچیدہ صورتحال کا سامنا ہے، سید محمد عاصم شاہ

ملکی معیشت کو پیچیدہ صورتحال کا سامنا ہے، سید محمد عاصم شاہ

  



لاہور(لیڈی رپورٹر)سیلز ٹیکس پالیسی کی وجہ سے سرمائے کی قلت کا شکار ہوچکا ہے۔ جولائی 2019 سے اب تک 70 فیصد کلیمز کی ادائیگی مختلف وجو ہات کی بنا پر تعطل کا شکار ہیں۔ انہوں نے مزید بتایا کی نئی سیلز ٹیکس پالسی میں ابہام کی وجہ سے Rejected یاDeferred  ہونے والے سیلز ٹیکس کلیمز کی پروسیسنگ کے لئے دستیاب متعلقہ فورم نہ ہونے کی وجہ سے لوکلRTO میں بھی برآمد کنند گان کی کوئی شنوائی نہیں ہو رہی اور نہ ہی ایسے کیس وصول کئے جارہے ہیں۔ سید محمد عاصم شاہ  نے مزید بتایا کہ ملکی معیشت کو پیچیدہ صورتحال کا سامنا ہے انہوں نے کہ اگر چہ درآمدات میں کمی واقع ہو رہی ہے لیکن برآمدات میں اضافہ اس تناسب سے نہ ہونے کی وجہ سے  امپورٹ ڈیوٹیز کی مد میں ہونے والی کمی سے محصولات کا ہدف تقریباً  نا ممکن ہو گیا ہے۔ جسکا واضح ثبوت رواں مالی سال کے ابتدائی  چار م ماہ  کے دوران محاصل 1.44کھرب کے طے شدہ حدف کے مقابلے میں صرف 1.28 کھرب وصول کئے جا سکے ہیں۔سید محمد عاصم شاہ نے حکومت سے گذارش کی کہ فی الفور شرح سود کو سنگل ڈجٹ تک لایا جائے تاکہ مقامی معیشت میں سرمائے کی سپلائی  بڑھا کر پیداواری سر گرمی کو فروغ دیا جا سکے۔

 سابق چئیر مین اپبوما نے حکومت سے گزارش کی کہ معاشی استحکام کے حصول کے لئے ایکسپورٹ سیکٹر کے مسائل تر جیحاً حل کرنے پڑیں گے جس میں سر فہرست برآمد کنندگان کے حکومت کے پاس پھنسے ہوئے اربوں روپے فوری طورپر ادائیگی کی ضرورت ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پالیسی سے متعلق ابہام کو فوری طور پر حل کیا جائے تاکہ بغیر کسی رکاوٹ کے معاملات تیزی سے نمٹائے جا سکیں۔

مزید : کامرس