وفاقی حکومت کی ناقص پالیسیوں سے سندھ میں صنعتیں تباہی کا شکارہیں: جام اکرام

وفاقی حکومت کی ناقص پالیسیوں سے سندھ میں صنعتیں تباہی کا شکارہیں: جام اکرام

  



کراچی(اکنامک رپورٹر)صوبائی وزیر برائے صنعت و تجارت اور امداد باہمی جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت کی نااہلی اور ناقض پالیسیوں کی وجہ سے صوبہ سندھ میں صنعتیں تباہی کا شکار ہیں اور ہم وفاقی حکومت سے اپنا حق مانگ رہے ہیں کوئی بھیک نہیں مانگ رہے۔ حکومت سندھ صنعتکاروں کے ساتھ ہے۔ اگر وفاقی حکومت کی پالیسیوں کے خلاف دھرنا بھی دینا پڑا تو ہم صنعت کاروں کے ساتھ مل کر دھرنا دیں گے۔ یہ بات  انہوں نے جمعرات کو کراچی پریس کلب میں صنعت کاروں کی تنظیموں کے عہدیداران کے ہمراہ ایک مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہیں۔ اس موقع پر کراچی انڈسٹریل فورم کے چیف کوآرڈینیٹر محمد جاوید، بلوانی، کونسل آف پاکستان ٹیکسٹائل ایسوسی ایشن کے صدر زبیر موتی والا، دیگر ایسوسی ایشنز کے عہدیداران سلمان چالہ، اسلام الدین، علی شاہد، نسیم اختر، احمد چنائے اور دیگر افراد بھی   موجود تھے۔ صوبائی وزیر جام اکرام اللہ دھاریجو نے مذید کہا کہ کراچی کے صنعت کار دہائیاں دے رہے ہیں کہ بجلی اور گیس کی لوڈ شیڈنگ کے باعث صنعتیں تباہ ہورہی ہیں تو اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ ملک کی معیشت کا کیا حال ہوگا اور دوسری طرف وفاقی وزرا معیشت کی بہتری کا راگ الاپنے میں مصروف ہیں جو انتہائی افسوناک عمل ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کراچی آتے ہیں لیکن ان کے پاس سندھ کے صنعت کاروں کے مسائل سننے کا وقت نہیں ہوتا۔ کراچی سے تعلق رکھنے والے وفاقی وزرا نے بھی ان مسائل سے آنکھیں بند کر رکھیں ہیں۔ صوبائی وزیر برائے صنعت و تجارت اور امداد باہمی جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ گیس کی بلاجواز بندش سے لاکھوں گھروں کے چولہے ٹھنڈے پڑ گئے ہیں۔ ہزاروں افراد بے روزگار ہوگئے ہیں اور شدید اذیت کا شکار ہیں۔صوبائی وزیر صنعت، کامرس و امداد باہمی جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ سندھ 70% فیصد گیس کی ملکی پیداور دے رہا ہے اور  سندھ 55 فیصد ایکسپورٹ کرتا ہے لیکن اپنے جائز حق سے محروم ہے۔ انہوں نے کہا کہ نااہل حکومت کی کم عقلی کے وجہ سے بجلی گئس پر 175 ارب کے بھاری سلیز ٹیکس لگا دئیے ہیں جو ناقابل برداشت ہیں اور صنعتیں تباہ کرنے کے مترادف ہیں۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ سندھ اور سندھ کے لوگ اپنا آئینی اور قانونی حق مانگ رہے ہیں۔ اگر  وفاق نے گیس کی فوری فراہمی نہیں کی تو انڈسٹریاں بند ہونے کا خطرہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت ہوش کے ناخن لے۔  وفاقی حکومت اور ان کے وزرا کو قومی معاملات پر سنجیدہ ہونا ہوگا. صوبائی وزیر برائے صنعت و تجارت اور امداد باہمی جام اکرام اللہ دھاریجو نے صنعت کاروں کو یقین دلایا کہحکومت سندھ صنعتکاروں کے ساتھ کھڑی ہے جو بھی ان کا لانحہ عمل ہوگا ساتھ رہیں گے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر