ڈاکٹہرز نے انٹرنیشل ٹائیگر چیلنج 2019“جیت لیا

ڈاکٹہرز نے انٹرنیشل ٹائیگر چیلنج 2019“جیت لیا

  



کراچی (پ ر)پاکستان سے تعلق رکھنے والے جدت پسندٹیکنالوجی اسٹارٹ اپ ڈاکٹہرز (http://www.do cthers.com) کو، حال ہی میں بنگلہ دیش میں منعقد ہونے والے SOLVE MIT میں ’انٹرنیشنل ٹائیگر چیلنج 2019‘کے فاتح کے طور پر منتخب کر لیا گیا ہے۔سنہ 2015ء سے ڈاکٹہرزفیمیل ہیلتھ کیئر پروائیڈرز کو صنفی شمولیت کی بنیاد پر ملازمت فراہم کر رہا ہے، فرنٹ لائن پر کام کرنے والی ہیلتھ ورکرز (نرسیں اورمڈوائیوز)کی مہارتوں میں اضافہ کر رہا ہے، انہیں ٹیکنالوجی فراہم کر رہا ہے اور فیکٹریوں میں قائم SMART ٹیلی میڈیسن کلینکس سمیت پورے پاکستان کے 1500 دیہاتوں میں تعینات کر رہا ہے۔یہاں وہ صحت سے متعلق خدمات تلاش کرنے والوں کا لائسنس یافتہ خواتین ڈاکٹروں کے عالمی نیٹ ورک سے رابطہ قائم کراتا ہے۔ ٹائیگر چیلنج میں بین الاقوامی درخواست گزاروں میں سے ڈاکٹہرز نے بنگلہ دیش کی ریڈی میڈ گارمنٹس کی فیکٹریوں میں SMART ٹیلی میڈیسن کلینک کے ماڈل پر عمل درآمدکی تجویز پیش کی تھی۔ٹائیگر آئی ٹی فاؤنڈیشن(Tiger IT Foundation) نے 2ملین امریکی ڈالرز مختص کیے تھے جن کا مقصد ’انٹرنیشنل ٹائیگر چیلنج 2019‘ جیتنے والی تین ٹاپ ٹیموں میں سرمایہ کاری کرنا تھا۔ ان تین ٹیموں میں ڈاکٹہرز ”خواتین کے درمیان رابطہ قائم کرنے، صحت میں بہتری اور زندگیوں میں تبدیلی لانے“کی بنیاد پر شامل ہوئی تھی۔ دوسری ٹیم ڈرنک ویل (Drinkwell) تھی جو”پانی بطور خدمت (Water as a Service)“ اور فیلکس (Feelix) ”AI ریسپریٹری ہیلتھ کیئر (AI Respiratory Healthcare)" کی بنیاد پر شامل ہوئی تھی۔ایکویٹی کی بنیاد پر اس سرمایہ کاری کا مقصد اِن وینچرز کو بنگلہ دیش اور پاکستان سمیت دیگر ابھرتی ہوئی مارکیٹوں میں اپنی ترقی کو تیز کرنے میں مدد فراہم کرنا تھا۔اس کامیابی پر ڈاکٹہرز کے شریک بانی اور چیف ایگزیکٹو چیئرمین، ڈاکٹر عشر حسن نے کہا،”یہ ڈاکٹہرز اور پاکستان دونوں کے لیے انتہائی فخر کی بات ہے کہ ہمیں MIT SOLVE اور ٹائیگر آئی ٹی فاؤنڈیشن کی جانب سے تسلیم کیا گیا ہے۔اس سے ایک جدت پسند قوم کے طور پر پاکستان کا تاثر مضبوط ہو گا اور انٹریپرینیورل ٹیک انڈسٹری میں مزید تحریک پیدا ہو گی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر