سرکاری ملازمین کے بچوں کیلئے تعلیمی سکالر شپ میں اضافہ

  سرکاری ملازمین کے بچوں کیلئے تعلیمی سکالر شپ میں اضافہ

  



رحیم یارخان(نمائندہ پاکستان)پنجاب حکومت نے سرکاری ملازمین کے بچوں کے لئے بناولنٹ فنڈ (تعلیمی سکالرشپ) 2019ء میں اضافہ کر دیاہے،جس کے مطابق سکیل ایک تا15 کے نان گزٹیڈملازمین کے بچوں کے لئے پرائمری سے(بقیہ نمبر49صفحہ12پر)

میٹرک تک 1500 سو روپے سے بڑھا کر 5 ہزار روپے، انٹرمیڈیٹ سے بیچلر تک 3 ہزار روپے سے بڑھا کر 10 ہزار روپے، اور ماسٹر،ایم فل اور پی ایچ ڈی کے لئے 6 ہزارسے بڑھا کر 10 ہزار روپے کر دیا گیا ہے جبکہ سکیل 16 تا سکیل 22 تک کے گزٹیڈ ملازمین کے بچوں کے لئے پرائمری سے میٹرک تک 5 ہزار روپے سے بڑھا کر 20 ہزار روپے اور انٹر میڈیٹ سے بیچلر تک 14 ہزار سے بڑھا کر 50 ہزار روپے، اور ماسٹر،ایم فل اور پی ایچ ڈی کے لئے 16 ہزار روپے سے بڑھا کر 50 ہزار روپے کیا گیا ہے، علاوہ ازیں وہ بچے جن کے مارکس 90 فیصد یا اس سے زیادہ ہیں ان کو معمول کے مطابق سکالرشپ کے ساتھ 50 ہزار روپے زیادہ دیئے جائیں گے،یہ سکالرشپ (بناولنٹ فنڈ) پرائمری تا ماسٹر لیول تک کے ان طلباء وطالبات کو دیا جاتا ہے جنہوں نے گزشتہ امتحان میں 60 فیصد مارکس حاصل کئے ہیں اس سلسلے میں درخواستیں یکم جنوری 2020 سے 31 مارچ 2020 تک جمع کروائی جا سکتی ہیں سکالرشپ کے لئے اہل طلباء وطالبات کے والدین میں سے کسی ایک کا گورنمنٹ ملازم ہونا ضروری ہے تاہم پالیسی کے مطابق ریٹائرڈ یا وفات شدگان سرکاری ملازمین کیبچے بھی اس سکالرشپ (بناولنٹ) کے لئے درخواست دے سکتے ہیں۔

اضافہ

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...