نشتر سے پکڑا جانیوالا جعلی ڈاکٹر جنرل ہسپتال لاہورسے پھرگرفتار

  نشتر سے پکڑا جانیوالا جعلی ڈاکٹر جنرل ہسپتال لاہورسے پھرگرفتار

  



ملتان (وقائع نگار) لاہور جنرل ہسپتال میں مریضوں کے لواحقین سے نو سر بازی کرنے والا جعلی ڈاکٹر پہلی بار نشتر ہسپتال

(بقیہ نمبر57صفحہ12پر)

سے پکڑے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔ ذرائع سے معلوم ہوا ہے لاہور کے جنرل ہسپتال میں جعلی ڈاکٹر حافظ محمد اسد وگ پہن کر مریضوں کو ہسپتال میں جھانسہ دیکر پیسے بٹورتا ہوا سکیورٹی گارڈز کے ہتھے چڑھ گیا۔جس پر الزام تھا کہ اس نے جلو پارک کے مریض سے 10ہزار روپے علاج کے نام پر وصول کیئے تھے۔جعلی ڈاکٹر کے خلاف مقدمہ درج کرکے جیل بھیج دیاگیا ہے۔واضح رہے پہلی بار جعلی ڈاکٹر حافظ اسد اس سے قبل رواں سال چوبیس جنوری کو نشتر ہسپتال سے پکڑا گیا تھا۔جو نشتر ہسپتال میں گزشتہ ساتھ ماہ سے جعلی ڈاکٹر بن کر مریضوں اور انکے لواحقین سے علاج کے نام پر لوٹ مار میں مصروف تھا۔جہاں اس نے سر پر ویگ نہیں لگائی ہوئی تھی۔جعلی ڈاکٹر حافظ محمد اسد ضلع رحیم یار خان کا رہائشی ہے۔

گرفتار

مزید : ملتان صفحہ آخر