سورج گرہن، ملتان سمیت مختلف شہروں میں نمازکسوف کااہتمام، ملکی استحکام کیلئے دعائیں

سورج گرہن، ملتان سمیت مختلف شہروں میں نمازکسوف کااہتمام، ملکی استحکام ...

  



ملتان، رحیم یار خان(سپیشل رپورٹر، نمائندہ پاکستان)دعوت اسلامی کے زیر اہتمام سورج گرہن کے دوران مختلف مقامات پر نماز کسوف کا اہتمام کیا گیا۔ ملتان میں مرکز دعوت اسلامی فیضان مدینہ شاہ رکن عالم کالونی، جمال مصطفیٰ مسجد سمیجہ آباد، جمال مصطفیٰ(بقیہ نمبر20صفحہ12پر)

مسجد سرفراز آباد، فیضان مدینہ مسجد رنگیل پور، نشتر کالج، ملتان پریس کلب، فیصل مسجد شاہ ٹاون، زمزم مسجد ڈیرہ محمدی، نور مسجد تحصیل دفتر، حیات القران بہاولپور بائی پاس، فیضان غوث الاعظم مسجد بہاولپور بائی پاس، زوالنورین مسجد یعقوب ٹاون، فیضان عطار مسجد فضل ماڈل، فیضان مدینہ مسجد نادرن بائی پاس، فیضان مدینہ مسجد ماڈل ٹاؤن سمیت جنوبی پنجاب کے درجنوں مقامات پر نماز ادا کی گئی۔رحیم یارخان(نمائندہ پاکستان)سورج وچاند گرہن اللہ پاک کی نشانیوں میں سے ہیں جو اللہ تعالیٰ کے مقررکردہ ایک حساب کے تحت طلوع وغروب کے نظام میں جکڑے ہوئے ہیں اوراسی مقررکردہ حساب کی ایک نوع یہ بھی ہے کہ ان کو مختلف اوقات میں گرہن لگتا ہے سورج گرہن اللہ تعالیٰ کی قدرت کی نشانیوں میں ایک نشانی ہے اوران کے دکھلانے کا مقصد اللہ تعالیٰ یہ ذکر فرماتے ہیں اورہم ڈرانے کے لئے ہی نشانیاں بھیجتے ہیں،سورج گرہن کو ظاہر کرنے کا مقصدبھی ڈرانا ہے ان خیالا ت کا اظہار جے یو آئی کے ضلعی جنر ل سیکرٹری مفتی نعمان حسن لدھیانوی نے سورج گرہن ہونے پر مرکزی جامع مسجد المصطفےٰ خاتم النبین میں نمازکسوف کی ادائیگی کے بعد خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں اللہ پاک کی طرف رجوع کرنا چاہئے اورتوبہ استغفا رکرنا چاہئے،حضرت ابوبکر صدیق رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے مروی حدیث میں ہے کہ حضور اکرم ؐنے فرمایا کہ سورج اورچاند اللہ تعالیٰ کی قدرت کی نشانیوں میں سے دوبڑی نشانیاں ہیں تمام مسلمان اپنے معاملات قرآن وسنت کے مطابق سرانجام دیں،حقوق اللہ اورحقوق العباد کا خصوصی طور پر خیال رکھیں جب بھی سورج یا چاند گرہن ہوں تو تمام مسلمان اللہ کی طرف رجوع کریں اورتوبہ استغفارکثرت سے کریں۔اس موقع پرمفتی ابوبکر لغاری،میاں خالد عزیز،حافظ عثمان لدھیانوی،حافظ ناصر علیم بھٹی ودیگر موجودتھے،اس موقع پر ملکی سلامتی استحکام اورپاکستان کو اندرونی وبیرونی خلفشارسے بچانے کے لئے خصوصی دعا کرائی گئی۔

نمازکسوف

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...