فوڈ انسپکٹر قتل کیس، پولیس تاحال قاتل گرفتار کرنے میں ناکام

فوڈ انسپکٹر قتل کیس، پولیس تاحال قاتل گرفتار کرنے میں ناکام

  



ملتان (وقائع نگار)پولیس تھانہ گلگشت نے فوڈ انسپکٹر کے قتل کی تحقیقات میں ملزمان کا سراغ نہ لگ سکا۔جسکی وجہ سے تفتیش میں مزید پیش رفت نہ ہوسکی۔پولیس کو فرانزک کی رپورٹ کا انتظار۔جبکہ مقتول کے قریبی دوست تفتیش کیلئے پولیس کے ریڈار پر آگئے ہیں۔پوچھ گوچھ کیلئے سوالات تیار۔پولیس نے مجموعی طور پر طالب علموں سمیت 22 افراد مقدمہ میں شامل تفتیش ہوچکے ہیں۔واضح رہے گل(بقیہ نمبر19صفحہ12پر)

گشت پولیس نے مقتول نذر حسین کی بیوی کی مدعیت میں تقریبا بیس روز قبل مقدمہ تو درج کر لیا تھا۔ مگر مقامی پولیس تاحال اصل مجرم گرفتار کرنے یا نذر حسین کی وجہ موت کے بارے میں اپنی حتمی رائے قائم نہیں کرسکی ہے۔حالانکہ پولیس شک کے شبہ میں اس وقت تک طالب علموں سمیت بائیس افراد کو مقدمے میں شامل تفتیش کرچکی ہے۔پولیس ذرائع کے مطابق فوڈ انسپکٹر نذر حسین کی لاش جب گل گشت کے علاقے میں واقع ہاسٹل سے ملی۔تو اس وقت لاش کی قمیض کے پہلے دو بٹن ٹوٹے ہوئے تھے.جبکہ ایک بٹن ٹوٹ کر قمیض کے ساتھ وہیی لٹکا گیا۔ گلے کے سامنے والے حصے میں کچھ نشانات ہیں۔جن کے اوپر سے ایک دھاگہ بھی ملا ہے۔پولیس جائے وقوعہ سے ملنے والے تمام تر شوائد کی جانچ پڑتال کرنے کے حوالے فرانزک رپورٹ کا انتظار کر رہی ہے۔جسکی روشنی میں مقدمہ کو یکسو کیا جائے گا۔ ذرائع کے مزید مطابق طلباء سمیت 22 افراد کا فردا فردا بیان ریکارڈ کرلیا گیا ہے۔اس کے علاؤہ پولیس نے مقتول نذر حسین کے قریبی دوست سے بھی پوچھ گوچھ کیلئے سوالات تیار کرلیے ہیں۔یاد رہے مذکورہ قریبی دوست نے تاحال گل گشت پولیس کو اپنا تحریری بیان ریکارڈ نہیں کروایا ہے۔ذرائع کے مطابق پولیس نے ہر صورت انکے قریبی دوست کا بیان صفحہ مثل پر لانا ہے۔

ناکام

مزید : ملتان صفحہ آخر