وزیراعظم سے2 دنوں میں مشرق وسطیٰ کے 2اہم ممالک کے وزرا کی ملاقاتیں

وزیراعظم سے2 دنوں میں مشرق وسطیٰ کے 2اہم ممالک کے وزرا کی ملاقاتیں
وزیراعظم سے2 دنوں میں مشرق وسطیٰ کے 2اہم ممالک کے وزرا کی ملاقاتیں

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیراعظم سے2 دنوں میں مشرق وسطیٰ کے 2اہم ممالک کے وزرا کی ملاقاتیں ہوئی ہیں۔گزشتہ روز سعودی عرب کے وزیر خارجہ فیصل جبکہ آج یواے ای کے وزیرشیخ نہیان بن مبارک النہیان کی ملاقات ہوئی

ملاقاتوں میں دوطرفہ تعلقات اورباہمی دلچسپی کے امورپربات چیت ہوئی۔

پی ٹی وی نیوز کے مطابق وزیراعظم سے یواے ای کے وزیرثقافت شیخ نہیان بن مبارک النہیان کی ملاقات ہوئی ہے جس میں مشترکہ اہمیت کے معاملات،سرمایہ کاری،اقتصادی وثقافتی اورترقیاتی تعاون پربھی گفتگو کی گئی۔ملاقات میں دوطرفہ تعاون اور باہمی دلچسپی کے امور پر بھی تبادلہ خیال کیاگیا۔

ہم نیوز کے مطابق یو اے ای کے وزیرشیخ نہیان نے وزیراعظم ہاوس میں غاف درخت کا پودابھی لگایا۔یہ درخت صحرا میں برداشت اور استقلال کی علامت اور پرانے رسم و رواج کا گواہ ہے۔درخت امارات کی جانب سے منائے گئے رواداری سال کی علامت کے طور پر منتخب کیا گیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ روزوزیراعظم عمران خان سے سعودی عرب کے وزیر خارجہ فیصل بن فرحان السعود نے وزیراعظم ہاوس میں ملاقات کی جہاں مسئلہ کشمیر کے حوالے سے اسلامی تعاون تنظیم کے کردار کو فعال کرنے سمیت باہمی تعلقات اور علاقائی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

وزیراعظم آفس سے جاری بیان کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے سعودی عرب کے وزیر خارجہ کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان سعودی عرب کے ساتھ اپنے تعلقات کو خصوصی اہمیت دیتا ہے جو کہ قریبی دوستانہ و تاریخی تعلقات اور عوام کی سطح پر تعاون کی بنیاد پر مبنی ہیں۔

انہوں نے فروری 2019 میں سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے دورہ پاکستان کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اس سے دونوں ممالک کے درمیان مختلف شعبوں میں باہمی تعاون اہمیت اجاگر ہوتی ہے۔وزیراعظم عمران خان نے دونون ممالک کے درمیان بڑھتے ہوئے معاشی تعلقات اور مختلف شعبوں بالخصوص پیٹرو کیمیکلز، معدنیات اور قابل تجدید توانائی میں سعودی عرب کی سرمایہ کاری کے عزم کو سراہا۔

وزیراعظم نے امید ظاہر کی کہ سعودی عرب کی ٹیم حالیہ دورہ سعودی عرب کے دوران ولی عہد سے ملاقات کے دوران طے ہونے والے شیڈول کے مطابق سیاحتی شعبے میں بہتری میں تعاون کے لیے جلدہی پاکستان کا دورہ کرے گی۔بیان میں کہا گیا ہے کہ ملاقات کے دوران وزیراعظم عمران خان نے مقبوضہ جموں و کشمیر میں انسانی المیہ اور انسانی حقوق کی پامالیوں کو تفصیل سے اجاگر کیا۔

انہوں نے بھارت کے امتیازی شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے) اور نیشنل رجسٹر آف سٹیزنز (این آر سی) کو بھی اجاگر کیا جس کے تحت بھارتی حکومت اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کو منظم انداز میں نشانہ بنا رہی ہے۔عمران خان نے کہا کہ بھارت کی جانب سے کنٹرول لائن (ایل او سی) پر جارحانہ اقدامات سے کشیدگی میں مزید اضافہ ہو رہا ہے اور علاقائی امن و استحکام داو پر لگ گیا ہے۔

انہوں نے زور دیا کہ عالمی برادری کو کشمیریوں کی آزادیوں اور حقوق کے تحفظ، مسئلہ جموں و کشمیر کے حل کے لیے سہولت فراہم کرنے کے لیے کردار ادا کریں اور بھارت میں اقلیتوں کے تحفظ کے لیے اقداما کیے جائیں۔

وزیراعظم ہاوس سے جاری بیان کے مطابق سعودی عرب کے وزیر خارجہ نے شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور ولی عہد محمد بن سلمان کی جانب سے پاکستانی عوام اور قیادت کو نیک خواہشات کا پیغام پہنچایا اور پاکستان کی جانب سے علاقائی امن و استحکام کے لیے اقدامات کو سراہا۔

مزید : قومی /اہم خبریں


loading...