”مذہب کی بنیاد پر کھلاڑیوں کیساتھ امتیازی سلوک کے بیان کی مذمت کرتا ہوں کیونکہ۔۔۔“ محمد یوسف بھی چپ نہ رہ سکے

”مذہب کی بنیاد پر کھلاڑیوں کیساتھ امتیازی سلوک کے بیان کی مذمت کرتا ہوں ...
”مذہب کی بنیاد پر کھلاڑیوں کیساتھ امتیازی سلوک کے بیان کی مذمت کرتا ہوں کیونکہ۔۔۔“ محمد یوسف بھی چپ نہ رہ سکے

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے مایہ ناز سابق بیٹسمین محمد یوسف نے پاکستان کرکٹ ٹیم میں مذہب کی بنیاد پر کھلاڑیوں کیساتھ امتیازی سلوک سے متعلق شعیب اختر کے بیان کو فضول قرار دیدیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق شعیب اختر نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے دعویٰ کیا تھا کہ لیگ سپنر دانش کنیریا کو ہندو ہونے کی وجہ سے امتیازی سلوک کا سامنا کرنا پڑا تاہم محمد یوسف نے ان کے بیان کو فضول قرار دیتے ہوئے مذمت کی ہے۔

انہوں نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری اپنے بیان میں کہا ”میں پاکستان کرکٹ ٹیم میں مذہب کی بنیاد پر کھلاڑیوں کیساتھ امتیازی سلوک کے بیان کی مذمت کرتا ہوں۔ میں پاکستان کرکٹ ٹیم کا حصہ رہا ہوں اور مجھے ہمیشہ ٹیم، انتظامیہ اور مداحوں کی جانب سے بہت سا پیار اور حمایت ملی! پاکستان زندہ باد۔۔۔“

واضح رہے کہ محمد یوسف عیسائی گھرانے میں پیدا ہوئے اور جس وقت پاکستان کرکٹ ٹیم کا حصہ بنے ، انہیں یوسف یوحنا کے نام سے جانا جاتا تھا تاہم 2005ءمیں انہوں نے اسلام قبول کر لیا اور ان کا نام محمد یوسف رکھ دیا گیا، بعد ازاں انہوں نے تبلیغی جماعت کا حصہ بن کر مذہب کی تبلیغ بھی شروع کر دی۔

مزید : کھیل