بلاول ’’ابو بچاؤ مہم ‘‘ کی بجائے بی بی کی جائے شہادت پر کھڑے ہو کر ۔۔۔مراد سعید پی پی چیئرمین پر برس پڑے

بلاول ’’ابو بچاؤ مہم ‘‘ کی بجائے بی بی کی جائے شہادت پر کھڑے ہو کر ۔۔۔مراد ...
بلاول ’’ابو بچاؤ مہم ‘‘ کی بجائے بی بی کی جائے شہادت پر کھڑے ہو کر ۔۔۔مراد سعید پی پی چیئرمین پر برس پڑے

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیر برائے مواصلات مراد سعید نے کہاہے کہ  اُنہیں اُمید تھی کہ  پیپلز پارٹی کے حادثاتی چیئرمین بی بی کی برسی کے موقع کو ”ابو بچاؤ“مہم کیلئے استعمال نہیں کریں گے لیکن حادثاتی چیئرمین نے ایک مرتبہ پھر واضح کردیا کہ والد کی کرپشن بچانے اور تقسیم کی سیاست کے علاوہ اُن کا کوئی دوسرا ایجنڈا نہیں، جمہوریت کی روح کو چھلنی کرنے کا کوئی ذمہ دار ہے تو وہ بلاول کے والد اور انکے انکل نواز شریف ہیں۔

لیاقت باغ  میں بلاول بھٹو زرداری کی تقریر پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے مراد سعید کا کہنا تھا کہ  ہونا تو یہ چاہئیے تھا کہ بلاول بی بی کے جائے شہادت پر کھڑے ہو کر اپنے والد کی سیاست کا تنقیدی جائزہ لیتے، کرپشن اور لوٹ مار کے دفاع کے علاوہ کوئی ہدف ہوتا تو بلاول آج کے دن کو خود احتسابی کیلئے استعمال کرتے، حادثاتی چیئرمین کیساتھ سٹیج پر براجمان ٹولہ بھٹو کے نظریات اور سیاسی میراث کو زندہ درگور کرنے کا ذمہ دار ہے۔ اُنہوں نے کہاکہ جس سیاسی فلسفے کے بھٹو خالق تھے اسے بلاول کے والد نے سمندر برد کرتے ہوئے ”لوٹ مار“کا نظریہ متعارف کروایا، بلاول اور انکے والد کی سیاست کا حقیقی چہرہ سندھ بھر میں پھیلی بدحالی میں دیکھا جاسکتا ہے، 5 سال تک بی بی کی روح قاتلوں کے تختہ دار پر لٹکنے کی منتظر رہی مگر بلاول کے والد ایوان صدر میں بیٹھ کر ٹھیکوں کی بولیاں لگاتے رہے۔ انہوں نے کہاکہ پیپلز پارٹی کا 5 سالہ دور اقتدار انجام کو پہنچا تو بی بی کے قاتل تو نہ ملے شرجیل میمنوں، سراج درانیوں، اور غنی مجیدوں جیسے جیب تراشوں کی ایک فوج بکھری نظر آئی،حادثاتی چیئرمین نے ایک مرتبہ پھر واضح کردیا کہ والد کی کرپشن بچانے اور تقسیم کی سیاست کے علاوہ ان کا کوئی دوسرا ایجنڈا نہیں، گزشتہ تین دہائیوں کے دوران قوم کیساتھ کی جانے والی ہر واردات کے تابے بانے بلاول کے والد اور انکلسے ملتے ہیں۔

مراد سعید نے کہاکہ جمہوریت کی روح کو چھلنی کرنے کا کوئی ذمہ دار ہے تو وہ بلاول کے والد اور انکے انکل نواز شریف ہیں، بلاول کے والد نے نواز شریف کیساتھ ملکر آئین، پارلیمان اور جمہوریت سب کو داغدار کیا، آج حادثاتی چیئرمین اپنا قبلہ درست کرنے کی بجائے اداروں کو دھمکانے کی مہم پر نکلے ہیں، حادثاتی چیئرمین کو شاید کسی نے سمجھایا نہیں کہ دامن پر لگے دھبے دھمکیوں سے نہیں مٹائے جاسکتے،انسان دیانتدار ہو تو شریفوں اور زرداریوں کی تمام کوششوں کے باوجود عدالت "صادق و امین" قرار دیتی اور عوام قیادت کا منصب سونپتی ہے۔ انہوں نے کہاکہ آج کی تقریر نے واضح کردیا کہ قدموں تلے زمین نہایت تیزی سے سرک رہی ہے، حادثاتی چیئرمین جتنا مرضی زور لگا لیں، سندھ پر قبضہ مزید برقرار نہ رکھ پائیں گے، پنجاب کیطرح سندھ بھی ”جمہوری قزاقوں“کے چنگل سے نجات حاصل کرے گا۔مراد سعید نے کہاکہ سیاسی جیب تراشوں کی تجوریوں سے قوم کا مال برامد کروائیں گے، عمران خان کی قیادت میں جمہوریت آگے بڑھے گی اور قوم اسلامی فلاحی مملکت کے قیام کا ہدف حاصل کریگی۔

مزید : قومی