بد اخلاقی کے واقعات میں اضافہ تشویشناک ہے،فرخ مون

بد اخلاقی کے واقعات میں اضافہ تشویشناک ہے،فرخ مون

لاہور( سپیشل رپورٹر) پاکستان تحریک انصاف لاہور کے سیکرٹری اطلاعات فرخ جاوید مون نے سال 2013کی پولیس کی اپنی جاری کردہ رپورٹ پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس رپورٹ میں پولیس نے خود رجسٹرڈ مقدمات میں اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ صرف ایک سال میں پنجاب میں ہر گھنٹے اور چالیس منٹ کے بعد ایک خاتون کے ساتھ زیادتی ہوئی اور اس طرح سے مجموعی طور پر پنجاب بھر میں ریپ کے 2576واقعات ہوئے

 جن میں 167معصوم بچوں کے ساتھ بھی زیادتی ہوئی اوراجتماعی بد اخلاقی کے سب سے زیادہ واقعات تخت لاہور میں ہوئے جہاں پر وزیراعظم ‘ وزیراعلی اور چیف سیکرٹری سمیت پولیس کے سربراہ اور بیورو کریسی بھی رہتی ہے وہاں کے شہر کے ےہ حالات ہیں تو پنجاب کے پسماندہ اضلاع میں عوام کے ساتھ جو ہوتا ہوگا اس کا تو تصور بھی نہیں کیا جا سکتا ہے۔

 فرخ جاوید مون کا مزید کہنا تھا کہ پولیس کی اس رپورٹ نے پنجاب کی ”اعلی“ گڈ گورنینس اورچھٹی باری لینے والوں کے پول کھول دئیے ہیں ہم تو ےہ بات شروع دن سے کہتے آئے ہیں کہ موجودہ حکومت کی کارکردگی صرف اخبارات کے اشتہارات تک محدود ہیں ،باریاں لینے اورووٹوں کی تصدیق سے ڈرنے والے قوم کی تقدیر نہیں بدل سکتے انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف پنجاب کی ایک ذمے دار اپوزیشن جماعت کی حثیت سے حکومت کے ” سنہری کارناموں“ کو عوام کے سامنے لاتی رہے گی اور حکومت کو عوام کے سامنے بے نقاب کرتی رہے گی اور عوام سے زیادتی نہیں ہونے دے گی۔

مزید : میٹروپولیٹن 4