زیادہ نوجوان دہشتگردوں کا تعلق نظر انداز کیے گئے علاقوں سے ہے،خرم نواز

 زیادہ نوجوان دہشتگردوں کا تعلق نظر انداز کیے گئے علاقوں سے ہے،خرم نواز

لاہور(نمائندہ خصوصی)پاکستان عوامی تحریک کے مرکزی سیکرٹری جنرل خرم نواز گنڈاپور نے کہا ہے کہ لاہور ایکسپریس وے منصوبے کو ہائیکورٹ نے کالعدم قرار دیکر 150ارب روپے مالیت کی قیمتی نجی پراپرٹی اور صوبائی خزانے کے 50ارب برباد ہونے سے بچا لیے۔ انہوں نے عوامی تحریک کے مرکزی سیکرٹریٹ میں صوبائی عہدیداروں اور صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ 50ارب خرچ کر کے صوبہ کے 10کروڑ عوام کو صاف پانی فراہم کیا جا سکتا ہے۔ 50ارب خرچ کر کے ایک سال کے اندر اندر صوبہ بھر کے تمام سرکاری سکولوں کو چار دیواری، بجلی، واش روم اور فرنیچر فراہم کیا جا سکتا ہے، سرکاری ہسپتالوں میں 10ہزار بیڈز کا اضافہ کیا جا سکتا ہے ، اس خطیر رقم سے 5سال تک سرکاری ہسپتالوں میں 100فیصد مفت ادویات فراہم کی جا سکتی ہیں، صوبہ میں 15 بڑے ہسپتال تعمیر ہو سکتے ہیں ہر تحصیل میں جدید سپورٹس سٹیڈیم تعمیر کیے جا سکتے ہیں۔جنوبی پنجاب کے 15 پسماندہ اضلاع میں 1 لاکھ روزگار کے مواقع پیدا کیے جا سکتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ قومیں، پلوں، سڑکوں، پلازوں سے نہیں تعلیم و تربیت اور انصاف سے مضبوط ہوتی ہیں۔ وزیراعلیٰ پنجاب نے 35ارب روپے سے میٹروبس لاہور بنا کر کون سا تیر مار لیا؟ فیروزپور روڈ کے دونوں طرف 2سو ارب کی جائیدادوں کو تباہ اور ہزاروں خاندانوں کا روزگار چھین لیا اور گھنٹوں ٹریفک جوں کی توں بند رہتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ لاہور کو پیرس بنانے کے خواب دیکھنے والے تھوڑی سی توجہ راجن پور، لیہ، مظفر گڑھ سمیت درجنوں اضلاع اور تحصیلوں کی بے حالی پر بھی دیں۔ پسماندہ اضلاع میں سب سے زیادہ نوجوان دہشت گرد اور انتہا پسندانہ سرگرمیوں میں ملوث پائے گئے ہیں۔ نظر انداز

مزید : صفحہ آخر