ہنجر وال میں خواتین کا گیس کی بندش کیخلاف سوئی ناردرن آفس کے باہر احتجاج

ہنجر وال میں خواتین کا گیس کی بندش کیخلاف سوئی ناردرن آفس کے باہر احتجاج

لاہور ( خبرنگار ) ہنجر وال جمال کالونی کی درجنوں خواتین کا گیس کی بدترین بندش کے خلاف سوئی ناردرن لاہور ریجن آفس واقع گلبرگ کے باہر احتجاجی مظاہرہ۔ خواتین کی زبردستی گیس آفس میں داخل ہونے کی کوشش ، گیس کمپنی کے گارڈوں کی جانب سے منع کرنے پر خواتین مشتعل ہو گئیں اور شدید نعرے بازی کی، اس موقع پر دھکم پیل کا واقعہ بھی پیش آیا ۔ گھنٹوں احتجاج کے باعث علاقے میں ٹریفک کا نظام درھم برھم ہوگیا۔ پولیس نے موقع پر پہنچ کر سیکیورٹی گارڈوں کو خواتین پر تشدد کرنے سے منع کیا ۔تفصیلات کے مطابق شہر میں گیس پریشر بہتر ہونے کے باوجود اب بھی شہر کے بہت سے علاقوں میں گیس کا پریشر بہتر نہیں ہوسکا۔ ہنجڑوال کے علاقے جمال کالونی کی غریب خواتین نے گیس کمپنی کے ریجنل آفس واقع گلبرگ کے باہر گیس بندش کے خلاف شدید احتجاج کیا۔ غریب علاقے کی خواتین کا کہنا تھا کہ گزشتہ 18ماہ سے علاقے میں گیس بند ہے۔ نہ تو گرمیوں میں گیس آتی ہے اور نہ ہی سردیوں میں گیس آتی ہے۔ باربار درخواستیں دی ہیں مگر کمپنی کی طرف سے گیس پریشر بہتر کرنے کے لیے کوئی اقدامات نہیں کئے گئے۔ گیس حکام ہر بار ٹال دیتے ہیں۔ غریبوں کو ملنے کے لیے کوئی ٹائم نہیں دیتے اور نہ ہی ملتے ہیں اور نہ ہی گیس بحال کرتے ہیں۔ اس موقع پر خواتین نے گیس حکام کے خلاف شدید نعرے بازی بھی کی ۔ آفس کے سکیورٹی گارڈز نے دفتر کے داخلی دروازوں کو بند کردیا ۔ جب بعض خواتین نے دفتر میں داخل ہونے کی کوشش کی تھی تو سکیورٹی گارڈزنے خواتین کو اندر جانے سے روکا جس کے دوران دھکم پیل کا واقعہ پیش آیا ۔ خواتین نے منیجنگ ڈائریکٹر عارف حمید سے مطالبہ کیا ہے کہ ذمہ داروں کو ناقص کارکردگی پر فوری طور پر تبدیل کیا جائے اور ان کے علاقے میں گیس بحال کی جائے۔ خواتین پانچ گھنٹے کے مظاہرے کے بعد گھروں کو واپس چلی گئی۔ خواتین کے احتجاج باعث گورو مانگٹ روڈ پر ٹریفک کئی گھنٹے بلاک رہی۔ مقامی پولیس نے موقع پر پہنچ کر کمپنی کے سکیورٹی گارڈوں کو خواتین کو دھکے دینے اوربدتمیزی کرنے سے روکا۔ اس موقع پولیس نے خواتین کو منع کیا کہ وہ بھی دفتر میں زبردستی اندر گھسنے کی کوشش نہ کریں۔ اس حوالے سے سوئی گیس کمپنی لاہور ریجن کے جی ایم محمود ضیاء احمد نے بتایا کہ خواتین نے مشتعل ہونے کے دوران گارڈوں سے بدتمیزی کی اور دھکم پیل کی ، تاہم بچی کے زخمی ہونے کا علم نہیں ہے۔ انہوں نے بتایا کہ جمال کالونی میں گیس کا پریشر بہتر بنانے کے لئے ٹیمیں روانہ کر دی گئی ہیں۔ احتجاج

مزید : صفحہ آخر