کالعدم تحریک طالبان کو فنڈز فراہم کرنے والے 3 ملزمان گرفتار

 کالعدم تحریک طالبان کو فنڈز فراہم کرنے والے 3 ملزمان گرفتار

لا ہور (کرا ئم سیل ) کالعدم تحریک طالبان پاکستان کو مختلف شہروں میں دہشت گردی اور قتل و غارت کا بازار گرم کرنے کے لئے فنڈز مہیاکرنے کی غرض سے اغوا برائے تاوان کی وارداتیں کرنے والے 3 ملزموں کو پو لیس نے گرفتار کر لیا ہے ۔ تینوں ملزموں منور خان، اکرم منصوری اور اقبال فاروقی کا تعلق کالعدم تحریک طالبان پاکستان سے ہے جوساتھیوں کے ہمراہ اقبال ٹاؤن سے فواد خان نامی نو جوان کو 6 کروڑ روپے تاوان کے لئے اغوا کر کے بنوں لے گئے تھے ۔جہاں سے اسے شمالی وزیر ستان لے جانا چاہتے تھے کہ سکیورٹی فورسز نے اچانک ریڈ کر دیا اورمغوی کو بازیاب کروانے کے ساتھ ساتھ متعدد ملزمان کو بھاری اسلحہ سمیت گرفتار کر لیاجبکہ اس واردات کا مرکزی ملزم حافظ منور خان اور اس کے ساتھ اکرم منصوری اور اقبال فاروقی جوگرفتاری سے بچ گئے تھے ساتھیوں کی گرفتاری کی خبر ملنے کے بعد روپوش ہو گئے تھے۔اٖغوا برائے تاوان کے اس مقدمہ میں ملوث مرکزی ملزموں کے گرفتار نہ ہونے کے باعث مقدمہ کی تفتیش سی آئی اے پولیس کے سپرد ہوئی اور ایس پی سی آئی اے محمد عمر ورک نے اغوا برائے تاوان سیل کے انچارج ڈی ایس پی طارق الیاس کیانی کو اس مقدمہ کی تفتیش پر مامور کیا جنہوں نے مغوی فواد خان اور اس کے ورثا سے رابطہ کر کے تاوان کے لئے آنے والی کالوں کی تفصیلات کے علاوہ دیگر معلومات بھی حاصل کیں اور ان معلومات کی روشنی میں پولیس ٹیم نے شب وروز محنت، پیشہ وارانہ مہارت اور جدید تکنیک کو استعمال میں لاتے ہوئے کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے سرگرم رکن ملزم حافظ منور خان کو گرفتار کر لیا۔ جس نے دوران تفتیش انکشاف کیا کہ تحریک طالبان پاکستا ن کے کمانڈر مطیع الرحمان نے ان کی یہ ذمہ داری لگائی تھی کہ پوسٹ گرایجویٹ کالج میانوالی کے وائس پرنسپل محمد اشفاق کے پاس بہت پیسہ ہے اس کے بیٹے کو اٖغوا کر کے 6 کروڑ روپے تاوان وصول کرو کیونکہ ہمیں تنظیم کو چلانے اور مختلف شہروں میں دہشت گردی کی وارداتیں کرنے کے لئے رقم کی اشد ضرورت ہے جس پر میں نے تحریک کے مقامی ساتھیوں اکرم منصوری ، اقبال فاروقی، مولانا محمد اور وزیر ستان سے آئے ہوئے ملزمان حکیم اللہ ، سجاد خان وغیرہ نے اغوا کا منصوبہ بنایا اور منصوبے کے مطابق میں نے اور جھنگ کے رہائشی اکرم منصوری اور اقبال فاروقی نے اقبال ٹاؤن سے بی ایس سی انجینئرنگ کے طالبعلم فواد خان کو اغوا کیا اور بنوں لے جا کر 6 کروڑ روپے تاوان طلب کیا تھا۔ پولیس نے ملزم کی نشاندہی پر اس کے دیگر 2 ساتھیوں اکرم منصور ی اور اقبال فاروقی کو بھی گرفتار کر لیا ۔ ملزمان سجاد خان ،حکیم اللہ اور عابد اللہ خان پہلے ہی بنوں جیل میں ہیں جنہیں تفتیش کے لئے لاہور لایا جا رہا ہے۔ اغوا برائے تاوان

مزید : صفحہ آخر