محکمانہ پالیسیوں کو نقصان پہنچانے والے عناصر سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائیگا،سعید الحسن

محکمانہ پالیسیوں کو نقصان پہنچانے والے عناصر سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا ...

  

لاہور (جنرل رپورٹر)صوبائی وزیر اوقاف پیر سید سعیدالحسن شاہ نے اپنے آفس میں علماء کے وفد سے ملاقات میں کہا ہے کہ محکمانہ پالیسیوں کو مافیا کے ہاتھوں نقصان پہنچانے والے عناصر کے خلاف سخت اقدامات شروع کر دئیے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ جلد درباروں سے پاپوش رکھنے اور بیت الخلاء استعمال کرنے کی اجرت کو ختم کر دیا جائے گا۔ اس سلسلے میں پاپوش کی نگرانی و ٹوکن دینے کے لئے والٹئرز کی خدمات حاصل کی جائیں گی۔انہوں نے کہا کہ تما م زونل افسران کو موبائل سمز بھی دی جا رہی ہیں جو باقاعدگی سے اپنی کارکردگی بارے محکمہ کو رپورٹ فراہم کرنے کے پابند ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ اوقاف اور محکمہ جنگلات باہمی تعاون و مشاورت سے نا قا بل کاشت اراضی پر جنگل آباد کریں گے تاکہ موسمیاتی ماحول کو آلودگی سے محفوظ رکھا جا سکے۔اس سلسلہ میں تمام ضلعی افسران اوقاف کی غیر کاشت ا راضی کی نشاندہی کر رہے ہیں تاکہ محکمہ جنگلات کے باہمی تعاون سے گھنے جنگلات آباد کئے جا سکیں ۔ انہوں نے کہا کہ تمام درباروں پر نزرانہ بکسوں کو ڈویژنل ،زونل اور ضلعی خطیبوں ،بنک نمائندوں اور ایڈمنسٹریٹر کی موجودگی اور نگرانی میں ہی رقوم کی کاؤنٹنگ کے لئے کھولے جائیں گے۔ کسی بھی موصول شکایت پر خلاف سخت کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔ گھوسٹ حاضری کے خاتمہ کے لئے تمام اوقاف دفاتراور درباروں پر بائیو میٹرک حاضری سسٹم کو لاگو کرنے پر عملی اقدامات کا آغاز کر دیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ مانیٹرنگ ٹیمیں خفیہ وزٹس کا عمل جاری رکھے ہوئے ہیں جس کے خاطر خواہ نتائج سامنے آ رہے ہیں۔تشکیل کردہ مانیٹرنگ ٹیمیں تمام درباروں کی تزئین و آرائش ،لنگر خانوں،نذرانہ بکسوں کی آمدنی،وقف زمینوں پر شجر کاری ،سی سی ٹی وی کیمروں ،واک تھرو گیٹس کی چیکنگ اور دیگر معا ملات بارے بھی رپورٹس مرتب کررہی ہیں۔جس کی روشنی میں مزید سخت اقدامات عمل میں لائے جارہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ماضی میں اس محکمہ کو جس انداز میں مال مفت دل بے رحم سمجھ کر لوٹا گیا وہ سیاہ تاریخ کا حصہ بن گیا ہے۔پی ٹی آئی کی حکومت محکمہ اوقاف کا قبلہ درست کرنے میں اپنی مثال آپ ثابت ہو گی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -