ملاوٹ مافیا کیخلاف ایکشن پلان تیار،جلد اہم فیصلوں کا امکان

ملاوٹ مافیا کیخلاف ایکشن پلان تیار،جلد اہم فیصلوں کا امکان

  

بہاولپور (ڈسٹرکٹ رپورٹر)صوبائی وزیر خوراک پنجاب سمیع اللہ چوہدری نے کہا ہے کہ2 سال کے اندر اندر اشیاء خوردونوش کو ملاوٹ سے پاک بنادیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ملاوٹ (بقیہ نمبر30صفحہ12پر )

کے ناسور کو جڑ سے اکھاڑ پھینکیں گے ۔ ملاوٹ ایک قابل گرفت جرم ہے جس میں ہرگز کوئی معافی نہیں دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ بے شک ملاوٹ کے خاتمے کے لیے طاقت ور لوگوں سے جنگ کرنی پڑے ، ملاوٹ کو ختم کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ملاوٹ کے سدباب کے لیے زیرو ٹالرنس پالیسی پر عمل پیرا ہیں۔ یہ بات انہوں نے مقامی ہوٹل میں فوڈ فورٹیفکیشن کے موضوع پر منعقدہ سیمینار سے بطور مہمان خصوصی اپنے خطاب میں کہی۔ انہوں نے کہا کہ متوازن غذا جسم کو تندرست و توانا بناتی ہے اور فوڈ فورٹیفکیشن کے ذریعے اہم غذائی اجزاء خوراک میں شامل کیے جاتے ہیں جو قوت مدافعت میں اضافہ میں معاون و مددگار ثابت ہوتے ہیں۔ اس موقع پر ڈپٹی کمشنر شوذب سعید نے سیمینار سے خطاب میں کہا کہ فوڈ فورٹیفکیشن کے لیے بھر پور انتظامی سپورٹ فراہم کی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ وہ ہر ممکن حد تک فوڈ فوٹیفکیشن کے لیے ٹیم کی معاونت کریں تے ۔ انہوں نے کہا کہ فوڈ فورٹیفکیشن ایک بڑا چیلنج ہے جسے ہر صورت حاصل کیا جائے گا۔ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے پرنسپل قائد اعظم میڈیکل ڈاکٹر جاوید اقبال نے کہا کہ خو راک کی بدولت جسم بہترین کارکردگی فراہم کرتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ غذائی اجزاء کی کمی جسم کو متاثر کرتی ہے جو بالغ افراد کی پیداواری صلاحیت میں کمی اور بچوں میں جسمانی نشوو نما کو بھی متاثر کرسکتی ہے۔سیمینار سے ڈویژنل صدر فرزند علی گوہیر، چےئرمین ضلع کونسل شیخ دلشاد احمد قریشی و دیگر نے بھی خطاب کیا۔ سیمینار میں بتایا گیا کہ فوڈ فورٹیفکیشن روزمرہ خوراک میں وٹامنز اور منرلز کی کمی کو پورا کرنے کے ہلیے اضافی وٹامنز اور منرلز شامل کرنے کو کہتے ہیں ۔ فورٹیفائڈ خوراک کا استعمال صارفین کو حفاظتی فائدہ فراہم کرتا ہے جو بیماریوں سے بچنے، قوت مدافعت میں اضافے اور ذہنی و جسمانی نشوو نما میں مددو معاون ثابت ہوتا ہے۔

سمیع اللہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -