بائکو پیٹرولیم نے 1.4 ارب روپے کے منافع کا اعلان کردیا

بائکو پیٹرولیم نے 1.4 ارب روپے کے منافع کا اعلان کردیا

  

کراچی (پ ر) پاکستان کے صف اول کی آئل کمپنی بائکو پیٹرولیم پاکستان لمیٹڈ (بی پی پی ایل) نے 31 دسمبر 2018 کو اختتام پذیر ہونے والی پہلی ششماہی کے مالیاتی نتائج کا اعلان کیا ہے۔ مالی سال کی پہلی ششماہی کے دوران کمپنی کی مجموعی فروخت گزشتہ سال اسی عرصے کے مقابلے میں 52 فیصد متاثرکن اضافے سے 123.47 ارب روپے ہوگئی۔ یہ پاکستان کی انرجی انڈسٹری اور خاص طور پر آئل ریفائننگ انڈسٹری کے لئے مشکل وقت تھا۔ ڈالر کے مقابلے میں پاکستانی روپے کی قدر میں 14 فیصد کمی آئی۔ تیل کی قیمتوں کے لئے ماحول انتہائی غیرمستحکم رہا، انٹرنیشنل برینٹ آئل کی قیمت چند ماہ کے دوران سال کی بلند ترین سطح پر گئی اور پھر سال کی نچلی ترین سطح پر چلی گئی۔ دریں اثناء ملک میں فرنس آئل میں بہتری کی صورتحال بدستور کمزور رہی۔ اس مشکل صورتحال کے تناظر میں بائکو پیٹرولیم پاکستان لمیٹڈ کی ریفائنری کے ساتھ ریفائننگ مارجنز پر بھی منفی اثر پڑا۔ تاہم انتظامیہ نے ہر ممکن کوشش کی کہ مارکیٹ کے مشکل حالات کا اثر کمپنی پر کم سے کم پڑے ۔ بائکو پیٹرولیم نے موجودہ مالی سال کی پہلی ششماہی میں 1.4 ارب روپے کا مجموعی منافع حاصل کیا جو گزشتہ سال اسی عرصہ میں 4.7 ارب روپے تھا۔ گزشتہ سال 2.3 ارب روپے کے مقابلے میں 89 ملین روپے کا خالص منافع ہوا۔ فی شیئر کی بنیاد پر کمپنی نے گزشتہ سال اسی عرصہ میں 0.44 روپے فی شیئر کے مقابلے میں 31 دسمبر 2018 کو اختتام پذیر ہونے والی ششماہی کے لئے 0.02 روپے فی شیئر حاصل کیا۔ منافع میں کمی کی بڑی وجوہات درج بالا عوامل میں موجود ہے۔ بائکو پیٹرولیم مستقبل میں بہتر آپریشنز اور مالی کارکردگی کے لئے مکمل طور پر پرعزم ہے۔

مزید :

صفحہ اول -