کرونا وائرس سے بچاﺅ کیلئے سعودی عرب نے عمرہ زائرین کے داخلے پر پابندی عائد کر دی

کرونا وائرس سے بچاﺅ کیلئے سعودی عرب نے عمرہ زائرین کے داخلے پر پابندی عائد ...
کرونا وائرس سے بچاﺅ کیلئے سعودی عرب نے عمرہ زائرین کے داخلے پر پابندی عائد کر دی

  



ریاض (ڈیلی پاکستان آن لائن )کرونا وائرس کے خدشے کے پیش نظر سعودی عرب نے بھی حفاظتی اقدامات اٹھاتے ہوئے ابتدائی طور پر زائرین کی مکہ اور مدینہ میں آمد پر پابندی عائد کر دی ہے تاکہ مملکت میں وائرس کے پھیلاﺅ کو روکا جا سکے ۔

سعودی عرب کی وزارت خارجہ امور نے بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ ” وہ کچھ عرصہ سے کرونا وائرس کی پیشرفت پر نظر رکھے ہوئے تھے“ ۔ بیان میں کہا گیا کہ وائرس سے متاثرہ ممالک کو سپورٹ کرنے کیلئے ریاست منظور شدہ بین الاقوامی معیار ات کو زائرین پر عارضی پابندی عائد کرتے ہوئے لاگو کر رہی ہے ۔سعودی وزارت خارجہ کا کہناتھا کہ ریاست میں عمرہ زائرین کے داخلے پر عارضی پابندی عائد کی گئی ہے ۔

سعودی وزارت خارجہ کے مطابق خلیجی ممالک کے ان شہریوں پر بھی اس کا اطلاق ہوگا جو نیشنل آئی ڈی کارڈ استعمال کرتے ہیں جب کہ وائرس پھیلنے کے خدشات کے حامل ممالک کے شہریوں کے سیاحتی ویزا پر بھی پابندی لگادی گئی ہے۔

 وزارت خارجہ کے مطابق سعودی عرب میں سیاحتی ویزے پر سفر کرنے والوں کے داخلے کو بھی معطل کر دیا گیاہے ، اگر وہ ان ممالک سے آ رہے ہیں جہاں کرونا وائرس پھیل رہا ہے ۔سعودی عرب نے یقین دہانی کروائی ہے کہ یہ اقدامات عارضی ہیں ۔سعودی وزارت خارجہ نے شہریوں کیلئے پیغام جاری کرتے ہوئے یہ بھی کہا کہ وہ ایسے ممالک کے سفر سے گریز کریں جہاں کرونا وائرس پھیل رہا ہے ، ہم دعا کرتے ہیں کہ اللہ ہم سب پر رحم کرے ۔

یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ پاکستان میں دو مریضوں میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔ معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفرمرزا نے بتایا تھا کہ  کراچی  اور  اسلام آباد میں موجود دونوں متاثرہ افراد ایران سے آئے ہیں۔دونوں اشخاص کا کلینیکل اسٹینڈرڈ  پروٹوکول کے مطابق خیال رکھا جارہا ہے اور دونوں مریض مستحکم حالت میں ہیں۔

مزید : عرب دنیا