وہ امیر آدمی جسے اپنی پہلی بیوی کو طلاق دینے کے لیے 5 ارب روپے ادا کرنے پڑے، اب دوسری بیگم کو 20 ارب روپے دینا پڑیں گے

وہ امیر آدمی جسے اپنی پہلی بیوی کو طلاق دینے کے لیے 5 ارب روپے ادا کرنے پڑے، اب ...
وہ امیر آدمی جسے اپنی پہلی بیوی کو طلاق دینے کے لیے 5 ارب روپے ادا کرنے پڑے، اب دوسری بیگم کو 20 ارب روپے دینا پڑیں گے

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) معروف برطانوی کاروباری شخصیت سر مارٹن سوریل کی پہلی بیوی سے طلاق ہوئی تو انہیں بیوی کو طلاق کے تصفیے میں 2کروڑ 90لاکھ پاﺅنڈ (تقریباً 5ارب 75کروڑ روپے) دینے پڑے تھے۔ اب ان کی دوسری بیوی نے بھی طلاق کا دعویٰ کر دیا ہے اور غالب امکان ہے کہ اس طلاق میں سر مارٹن سوریل کو اپنے 10کروڑ پاﺅنڈ (تقریباً19ارب 82کروڑ روپے) مالیت کے عالیشان گھر سے ہاتھ دھونا پڑ سکتے ہیں اور یہ گھر اپنی دوسری اہلیہ کرسٹیانا کو طلاق کے تصفیے میں دینا پڑ سکتا ہے۔ کرسٹیانا کے سر مارٹن سے طلاق لینے کی وجہ بھی سر مارٹن کی وہی شرمناک حرکت ہے جس کی وجہ سے انہیں اپنی کمپنی سے ریٹائر ہونا پڑ گیا تھا۔

رپورٹ کے مطابق 2018ءمیں 75سالہ سر مارٹن کے متعلق انکشاف منظرعام پر آیا تھا کہ وہ مے فیئر میں واقع ایک قحبہ خانے گئے تھے اور وہاں کمپنی کے خرچ سے 300پاﺅنڈ دے کر ایک جسم فروش عورت کے ساتھ جنسی تعلق قائم کیا تھا۔اس کے کچھ عرصہ بعد سر مارٹن کی اپنی کمپنی ڈبلیو پی پی سے ریٹائرمنٹ کی تہلکہ خیز خبر آ گئی جس کی وجہ اسی سکینڈل کو بتایا گیا۔ اگرچہ سرمارٹن نے ایک انٹرویو میں قحبہ خانے جانے کا تو اعتراف کر لیا لیکن کمپنی کے خرچ پر وہاں جانے کی تردید کر دی تھی۔ انہوں نے یہ بھی کہا تھا کہ اس سکینڈل کے بعد بھی ان کی اطالوی نژاد اہلیہ کرسٹیانا ان کے ساتھ کھڑی ہے اور اس پر انہوں نے کرسٹیانا کی بہت تعریف بھی کی تھی۔

اگرچہ سر مارٹن اس سکینڈل کے بعد بھی اچھے ازدواجی تعلق کا دعویٰ کر رہے تھے لیکن کچھ عرصہ قبل کاروباری شخصیات کی ایک میٹنگ ہوئی جس میں روایتی طور پر تمام کاروباری شخصیات اپنی بیویوں کے ساتھ شریک ہوتے ہیں۔ اس میٹنگ میں سر مارٹن اکیلے آئے تھے جس پر شکوک و شبہات نے جنم لیا اور ایک اشارہ ملا کہ اس سکینڈل کی وجہ سے ان کا کرسٹیانا کے ساتھ تعلق اچھا نہیں چل رہا۔ اب یہ شک درست ثابت ہو گیا ہے اور کرسٹیانا نے سر مارٹن سے طلاق لینے کا باقاعدہ اعلان کر دیا ہے۔ ان کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ”میری اور میرے شوہر کی علیحدگی ہو چکی ہے اور میں طلاق لینے جا رہی ہوں جس سے ہماری 12سال کی شادی ختم ہو جائے گی۔ طلاق کے بعد میری اولین ترجیح میری بیٹی ہو گی اور میں میڈیا سے درخواست کرتی ہوں کہ وہ میری اور میری فیملی کی پرائیویسی کا احترام کریں۔“ لیڈی کرسٹیانا کے ایک دوست نے بتایا کہ ”کرسٹیانا اپنے شوہر کا جسم فروش عورت کے پاس جانے والا سکینڈل سامنے آنے کے بعد سے دل گرفتہ تھیں۔ وہ اندر سے ٹوٹ چکی تھیں تاہم انہیں طلاق کے فیصلے تک پہنچنے میں وقت لگا۔ وہ کہتی ہیں کہ اب وہ مارٹن پر قطعاً اعتبار نہیں کر سکتیں۔“ واضح رہے کہ سر مارٹن نے پہلی بیوی سے طلاق کے بعد 2008ءمیں کرسٹیانا کے ساتھ شادی کی تھی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس