قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس(ر)جاویداقبال نے ڈی جیز نیب کےنام بڑا حکم جاری کر دیا

قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس(ر)جاویداقبال نے ڈی جیز نیب کےنام بڑا حکم ...
قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس(ر)جاویداقبال نے ڈی جیز نیب کےنام بڑا حکم جاری کر دیا

  



اسلام آباد(ڈیلی  پاکستان آن لائن)قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس(ر)جاویداقبال نےنیب ہیڈکوارٹرزمیں منعقدہ کھلی کچہری میں ملک بھرسےآئے ہوئےعوام کی بدعنوانی، فراڈ، مضاربہ،مشارکہ، جعلی ہاؤسنگ،کو آپریٹوسوسائٹیوں، منی لانڈرنگ وغیرہ سے متعلق شکایات سنیں اور قانون کے مطابق ان پر احکامات صادر کرتے ہوئے نیب کے متعلقہ علاقائی دفاتر اور جو دوسرے محکموں سے متعلق تھیں ان کو ریفر کرنے کے لئے ہدایات جاری کیں۔

واضح رہے چیئرمین نیب جسٹس (ر)جاوید اقبال نے اپنے منصب کی ذمہ داریاں سنبھالنے کے بعد یہ فیصلہ کیا تھا کہ وہ عوام کی بدعنوانی سے متعلق نہ صرف ہر ماہ کی آخری جمعرات کو خود سنیں گے بلکہ نیب کے تمام علاقائی بیوروز کے ڈی جیز بھی اپنے اپنے علاقائی بیوروز میں عوام کی بدعنوانی سے متعلق شکایات سنیں گے اور قانون کے مطابق ان شکایات کا ازالہ کیا جائے گا۔چئیرمین نیب جاوید اقبال اپنے وعدہ کے مطابق ہر ماہ کی آخری جمعرات کو عوام کی بدعنوانی سے متعلق شکایات انتہائی اطمینان اور تسلی کے ساتھ سنتے ہیں بلکہ نیب کے علاقائی بیوروز میں متعلقہ ڈی جیز بھی ہر ماہ کی آخری جمعرات کو عوام کی درخواستوں کو سنتے ہیں۔ اب تک کے اعدادوشمار کے مطابق چئیرمین نیب جسٹس جاوید اقبال نے تقریباََ 15 سو شکایات کو نہ صرف خود سنا بلکہ نیب کے تمام علاقائی بیوروز کے ڈی جیز نے بھی اپنے اپنے علاقائی بیوروز میں عوام کی بدعنوانی سے متعلق ہزاروں شکایات کو سنا۔یہ امر قابل ذکر ہے کہ عوام کی تمام شکایات/ درخواستوں کا مکمل ریکارڈ رکھا جاتا ہے بلکہ عوام کو ان کی شکایات سے آگاہ بھی کیا جاتا ہے اس سلسلہ میں چئیرمین نیب کی ہدایت پر تمام ریکارڈ کو کمپیوٹرائزڈ کیا گیا ہے۔

چئیرمین نیب نے حسب وعدہ آج نیب ہیڈکوارٹرز اسلام آباد میں منعقدہ کھلی کچہری میں ملک بھر سے آئے ہوئے عوام کی شکایا ت انتہائی اطمینان اور تسلی کے ساتھ سنی بلکہ ان کے ازالہ کیلئے قانون کے مطابق احکامات صادر کئے جس پرشکایات کنندگان نے چیئرمین نیب جسٹس جاوید اقبال کی بدعنوانی سے متعلق ان کی شکایات کے حل کے لئے کی گئی کاوشوں کو سراہا۔

چیئرمین نیب جسٹس جاوید اقبال نے کہا کہ ملک بھر سے بدعنوانی کا خاتمہ نیب کی اولین ترجیح ہے،نیب نے عوام کی بدعنوانی سے متعلق شکایات کے ازالہ کے لئے نہ صر ف اپنے دروازے کھول دیئے ہیں وہاں نیب کے افسران/ اہلکاران ملک سے بدعنوانی کے خاتمہ کیلئے اپنے فرائض قومی فریضہ سمجھتے ہوئے ادا کر رہے ہیں تاہم بہتر سے بہتری کے لئے ہمیشہ کوشاں رہنا نیب کے ایمان اور یقین کا حصہ ہے۔چئیرمین نیب  جسٹس جاوید اقبال نے نیب کے تمام ڈی جیزکو ہدایت کی کہ وہ کرپشن فری پاکستان کے لئے اپنی تمام تر توانائیاں صرف کرتے ہوئے شکایات کی جانچ پڑتال، انکوائریاں اور انوسٹی گیشنز ٹھوس شواہد اور قانون کے تمام تقاضوں کومد نظر رکھتے ہوئے مکمل کریں تاکہ بدعنوان عناصر کو قانون کے مطابق انصاف کے کٹہرے میں کھڑا کیا جاسکے، جہاں قانون اپنا راستہ خود بنائے گا۔

مزید : قومی