دینی مدارس اسلام کے قلعے ہیں حکومتی بورڈ زقبول نہیں، عبدالقیوم حقانی 

دینی مدارس اسلام کے قلعے ہیں حکومتی بورڈ زقبول نہیں، عبدالقیوم حقانی 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


چکدرہ(نمائندہ پاکستان)دینی مدارس کو قومی دھارے میں لانے کی باتیں کرنے والے پہلے بیہودہ مغربی کلچر کو پروان چڑھانے والے اداروں کو لگام دیں ان خیالات کا اظہار مدرسہ صفحہ للبنین والبنات ستارہ میدان میں دستار بندی تقریب سے مہمان خصوصی ممتاز عالم دین مولانا عبدالقیوم حقانی،جے یوائی تحصیل میدان کے امیر مولانا وزیر زادہ حقانی، جنرل سیکرٹری مولانا فضل مولا اور مہتم جامعہ ہذا مولانا مقدم خان نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ دینی مدارس اسلام کے قلعے ہیں حکومتی بورڈز قبول نہیں ہیں وفاق المدارس کا ادارہ مدارس کے درمیان اتحاد، ہم آہنگی اور افہام وتفہیم سے معملات سلجھانے کے لئے بنایاگیا تھا جسے اب ریزہ ریزہ کرنے کی سازش ہورہی ہے، انہوں نے گزشتہ دنوں مسجد وزیر خان میں وفاقی وزیر فواد چودھری کے زیر نگرانی میں میوزیکل شو کرانے پر تشویش کااظہار کیااور کہاکہ اس سے مسجدومحراب کاتقدس پامال ہواہے مگراس پرحکومت کی خاموشی لمحہ فکریہ ہے مقررین نے کہا کہ دینی مدارس ہرسال کم وبیش 30لاکھ فرزندان توحید کو دینی علوم سے آراستہ کرکے انہیں پر امن اور باعزت شہری بنارہے ہیں جس سے دنیا بھر میں پاکستان کا نام روشن ہورہاہے، عصری علوم کے لئے سالانہ اربوں روپے امداد دینے کے باوجود طلبہ اعلیٰ تعلیم کے حصول کے لئے بیرون ممالک جاتے ہیں جبکہ یہاں کے دینی مدارس میں دنیاکے کونے کونے سے طلبہ علم کی پیاس بجھانے آرہے ہیں۔