موجودہ حکومت کووڈ 19سے بھی زیادہ خطر ناک ہے: ایمل ولی 

موجودہ حکومت کووڈ 19سے بھی زیادہ خطر ناک ہے: ایمل ولی 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


شبقدر(تحصیل رپورٹر)جب تک نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد نہیں ہوتا پاکستان کا گرے لسٹ سے نکلنا مشکل ہے۔ روز بروز عوام خون چوس کر مخصوص اداروں کو مضبوط کرنا ناقابل فہم ہے۔ موجودہ حکومت کوڈ 19سے بھی خطرناک ہے۔ اگر پالیساں اسی طرح رہی تو ملک وجود خطرے میں ہے۔ ان خیالات کا اظہار اے این پی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے بہادر خان آف رشکئی کے رہائش گاہ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ ایمل ولی خان نے ضلعی صدر اورممبر صوبائی شکیل خان عمرزئی، ضلعی جنرل سیکریٹری فیاض خان، مرکزی رہنماء معراج خان، تحصیل صدر شاہد خان، زاہد خان کتوزئی، سابقہ تحصیل کونسل ممبر شہریار خان، امجد خان کتوزئی، یوسی رشکئی کے صدر فرہاد علی اور سعید خان کے ہمراہ یوسی رشکئی میں مختلف ورکرز کے رشتہ داروں کے وفات پر تعزیت کی میڈ یا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایک طرف پاکستانی قیادت ایف ٹی اے ایف سے مذاکرات میں مصروف ہے تو دوسری طرف دہشت گردوں کے ہاتھوں معصوم اورنہتے خواتین قتل ہورہے ہیں۔ ان حالات میں پاکستان کا گرے لسٹ سے نکلنا ناممکن ہے کیونکہ جب تک نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد نہیں کیا جاتا بلکہ گرے لسٹ کے بجائے بلیک لسٹ میں چلا جائے گا۔ انھوں نے کہا کہ معیشت کے بہتری کے دعویداروں کو یہ معلوم نہیں کہ ملک کس طرف جا رہا ہے روزانہ اشیائے خوردنوش، بجلی، گیس اور پیٹرول کی قیمتوں میں اضافہ کرکے غریبوں کا خون چو س رہا ہے حکومت کی تباہ کن پالیسیوں سے ایسا لگ رہا ہے کہ اب ملک کا بقاء مشکل ہے۔