2افراد قتل، مختلف واقعات، حادثات میں 11ہلاکتیں، متعدد زخمی 

  2افراد قتل، مختلف واقعات، حادثات میں 11ہلاکتیں، متعدد زخمی 

  

 ملتان‘ مظفر گڑھ‘ عبدالحکیم‘ شاخ مدینہ‘ رحیم یار خان‘ گگو منڈی‘ دائرہ دین پناہ ٹھٹھہ صادق آباد‘ حاصل پر‘ کوٹ ادو (خصوصی رپورٹر‘ بیورو رپورٹ‘ نامہ نگار‘ خبر نگار‘ سٹی رپورٹر‘ نمائندہ خصوصی‘ تحصیل رپورٹر) تھانہ بستی ملوک کے علاقے ٹریفک حادثہ خاتون جاں بحق،ایک شخص کو تشویشناک حالت میں نشتر ہسپتال لایاگیا،پولیس نے موقع پر پہنچ کر کارروائی شروع کردی ہے‘قصبہ مڑل کا رہائشی ایاز رسول،ثریا بی بی کے ہمراہ(بقیہ نمبر49صفحہ 6پر)

 موٹرسائیکل پر سوار ہوکر گھر جارہے تھے کہ اڈا بلی والا کے قریب سامنے سے آنے والی تیزرفتار آئی ایس بے قابو ہوکر ٹکراگئی جس کے نتیجے میں ثریا بی بی زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر ہی جاں بحق ہوگئی اور ایاز رسول لہوں لہان ہوکر زمین پر گرگیا۔ تھانہ شاہ شمس کے علاقے 50سالہ نامعلوم شخص کی نعش نہر میں تہرتی ہوئی پائی گئی،پولیس نے موقع پر پہنچ کر کارروائی شروع کردی ہے۔تفصیل کے مطابق بستی غریباں والی نزد پیروالی پلی نہر میں نامعلوم شخص کی نعش تہر رہی تھی کہ جس کی اطلاع متعلقہ پولیس کو دی گئی،اطلاع پاکر پولیس نے موقع پر پہنچ کر مقامی لوگوں کی مدد سے نامعلوم شخص کی نعش نہر سے باہر نکال کر اپنے قبضے میں لیکر پوسٹ مارٹم کے لئے نشتر ہسپتال منتقل کردی گئی،پولیس کے مطابق نعش نامعلوم شخص کی ہے جس کی شناخت نہ ہوسکی ہے اور نہ ہی بظاہر جسم پر تشدد کے نشانات پائے گئے،تاہم پوسٹمارٹم کے بعد اصل حقائق منظر پر لائے جائے گے،واقعہ کے متعلق کارروائی شروع کردی ہے۔ تھانہ چہلیک کے علاقے سول ہسپتال ابدالی روڑکے قریب 40سالہ نامعلوم نشئی مردہ حالت میں پایاگیا جس کے بارے میں معلوم ہے کہ نامعلوم نشے کا عادی بتایا جاتا ہے جسے نشے نہ ملنے کی وجہ سے موت واقع ہوئی جس کی شناخت نہ ہوسکی،پولیس نے نامعلوم نشئی کی نعش قبضے لیکر ہسپتال منتقل کرنے کے بعد اہل خانہ کی تلاش شروع کردی ہے۔ مظفرگڑھ کے نواحی علاقہ لنگرسرائے کے قریب تیزرفتار ٹرالر نے 2 موٹر سائیکلوں کو پیچھے سے ٹکر ماردی جس کے نتیجے میں ایک موٹرسائیکل پر سوار اللہ بخش نامی نوجوان اور اس کا 6 سالہ بھائی عمر فاروق موقع پر جاں بحق ہو گئے جبکہ دوسرے موٹرسائیکل پر سوار 50 سالہ عبدالغفار اور اس کی 5 سالہ بیٹی جویریہ شدید زخمی ہوگئے انہیں سر اور ٹانگوں پر چوٹیں آئیں ریسکیو 1122 نے اطلاع ملنے پر جائے حادثہ پر پہنچ کر زخمیوں کو ابتدائی طبی امداد فراہم کرنے کے بعد ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال مظفرگڑھ منتقل کر دیا ہے جبکہ جاں بحق ہونے والوں کی میتوں کو ڈیڈ باڈی شیٹ سے کور کر کے ان کے گھروں میں پہنچا دیا ہے زخمی اور جاں بحق افراد کا تعلق قریبی علاقے مراد آباد سے بتایا گیا ہے، ٹرالہ جھنگ سے آ رہا تھا اور حادثہ ٹرالہ ڈرائیور کی تیزرفتاری اور غفلت کے باعث پیش آیا ہے خاندانی رنجش پر نوجوان قتل کردیا گیا،2افراد شدید زخمی،مقتول کے ورثاء کا مین روڈ بلاک کرکے احتجاج،واقعہ کے مطابق نواحی علاقہ موضع دین پور میں سرکاری پلاٹوں میں رشتہ کے تنازع پر سالہ بہنوئی کی آپس میں جھڑپ ہوئی جس کے نتیجہ میں خنجرکے وار کے سبب حق نواز اوررمضان شدید زخمی ہوگئے،جبکہ واقع میں تیسرا شدید زخمی عابد موقع پر جاں بحق ہوگیا۔دونوں مضروبین کو حالت تشویش ناک ہونے پر نشتر ہسپتال ملتان ریفر کردیاگیا ہے۔ملزمان موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔بعدازاں مقتول کے لواحقین نے نعش عبدالحکیم باگڑ روڈ پر رکھ کر روڈ بلاک کردیا،گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں۔وقوعہ کی اطلاع ملنے پر ڈی ایس پی کبیروالا اسحا ق سیال موقع پر پہنچ گیا متاثرین سے مذاکرات کے بعد بند راستہ ٹریفک کیلئے کھول دیا گیا۔نعش کوضروری کاروائی کیلئے آرایچ سی عبدالحکیم منتقل کردیا گیا ہے۔مقتول اوردونوں مضروبین آپس میں حقیقی بھائی ہیں۔پولیس نے ملزمان کی تلاش شروع کردی ہے۔ تیز رفتار بس نے موٹر سائیکل سواروں کو روند ڈالا دو خواتین سمیت دو افراد شدید زخمی ہوئے ایک جاں بحق ہوگیا‘ چک نمبر211ای بی کا رہائشی ندیم ولد علی احمد اور فوزیہ بی بی زوجہ عباس اور صدیقاں بی بی زوجہ عباس موٹر سائیکل پر سوار جا رہے تھے کہ چک نمبر217۔ای بی کے قریب تیز رفتار بس نے انہیں ٹکر مار دی جس کے نتیجہ میں تینوں افراد شدید زخمی ہو گئے جنہیں رُورل ہیلتھ سنٹر گگو منڈی پہنایا گیا لیکن ڈاکٹرز نے تشویش ناک حالت کے پیش نظر انہیں نشتر ہسپتال ملتان ریفر کر دیا لیکن صدیقاں بی بی نے زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے راستہ میں دم توڑ دیا۔  جن پور کی فیملی کی  گاڑی کو موٹر وے شجاع آباد انٹرچینج کے قریب حادثہ سماجی شخصیت سید شاھد حسین زیدی کی اہلیہ اور  بیٹی موقع پر جاں بحق جبکہ دوسری بیٹی بیٹا اور داماد شدید زخمی ہوگئے‘ حادثہ کی اطلاع ملتے ہی پورے جن پور کی فضا سوگوار ہو گی  تفصیلات کے مطابق جن پور کی سماجی شخصیت سید شاھد حسین زیدی کی فیملی کار پر ملتان جا رہی تھی کہ  شجاع آباد انٹرچینج کے قریب ان کی کار اور مزدا میں تصادم ہوا جس کی وجہ سے سید شاھد حسین زیدی کی اہلیہ اور بیٹی موقع پر جاں بحق جبکہ دوسری بیٹی بیٹا سید احمد زیدی  اور داماد سید حسن رضا  شدید زخمی کو فوری طور پر نشتر ہسپتال ملتان ریفر کر دیا گیا حادثہ کی خبر پر پورے جن پور کی فضا سوگوار ہو گی دریں اثنا نمازِ جنازہ میں  سید ظہیر احمد بابر۔مخدوم سید صفدر حسین رضوی۔رانا ہارون عباس سید مختار احمد رضوی سید طارق حسین رضوی۔سید کلیم اللہ رضوی مہر ارشد سیال ملک اظہر حسن نائچ سید شاھد اقبال گیلانی سید سجاد رسول رضوی۔ڈاکٹر کاشف رضا سید تنویر حسین زیدی سید علی رضا سید ہاشم رضا زیدی شیخ عبدالرحیم محمد جاوید اقبال سعیدی  ملک ساجد حسین آرائیں نیاز اے دشتی ڈاکٹر شاھد الیاس سمیت سینکڑوں افراد نے شرکت کی ہے۔ تیز رفتا موٹرسائیکل کی زدمیں آکر 8 سالہ بچہ جا بحق ہو گیا۔ نواحی بستی سیتاں والیکا آٹھ سالہ دانش ولد کالو ارائیں سیم نالہ کی سڑک پر کھیل رہا تھا کہ ایک تیز رفتار موٹر سائیکل کی زد می آکر موقع پر جاں بحق ہو گیاموٹر سائیکل سوار فرار ہو گیا۔ تیز رفتار کار کی موٹر سائیکل سواروں کو ٹکر،خاتون جاں بحق ہوگئی‘ تفصیل کے مطابق ٹھٹھہ صادق آباد کے نواحی اڈے رحیما چوک ملتان دنیاپور روڈ پر علی الصبح موٹر سائیکل سوار محمد عمران عمران والد مقبول سکنہ چک نمبر 15 ایم اپنی والدہ میں ا بی بی کے ہمراہ موٹر سائیکل نمبری MNL/4367 پر گھر سے دنیاپور فوتیدگی پر جارہے تھے کہ دنیاپور سے ملتان جانے والی تیز رفتار ویگنار گاڑی نمبر LEE/9429نے موٹر سائیکل سواروں کو بری طرح ٹکر ماردی جس سے موٹر سائیکل سوار خاتون مینا بی بی موقع پر جاں بحق ہوگئی جبکہ بیٹا عمران زخمی ہوگیا زخمی عمران کو نشتر ہسپتال ملتان منتقل کر دیا گیا۔ نواحی علاقہ جمال پور کے قریب نوجوان کو فارنگ کرکے قتل کر دیا گیا۔جمال پور کے رہاشی غلام رسول کا نوجوان بیٹا محمد بشیر تھیم جمال پور سے آ رہا تھا۔کہ راستے میں نا معلوم مسلح افراد نے فارنگ کرکے قتل کر دیا۔اور موقع سے فرار ہو گے۔اطلاع پر تھانہ قام پور پولیس نے موقع پر پہنچ کر نعش کو ہسپتال منتقل کرا دیا۔مذید تفتیش جاری ہے۔ گھر میں مستری کے ساتھ  مزدوری کرنے  پر لڑائی،والد کی ڈانٹ سے دلبرداشتہ 22 سالہ نوجوان نے کالا پتھر پی کر زندگی کا خاتمہ کرلیا، تھانہ کوٹ ادو کے علاقہ موضع جھنجھن والی پل مگھی کے رہائش حبیب  چانڈیہ کے گھر اساری کا کام ہو رہا تھا جہاں مستری کام کر رہے تھے، مزدور نہ ہونے پر والد نے بیٹے 22سالہ محمد شریف سے مزدوری کرنے کو کہا جس پر دونوں باپ بیٹے میں تو تکرار ہوئی تو باپ نے بیٹے کو ڈانٹ دیا جس کا محمد شریف نے برا منایا،بعدازاں گھر میں رکھا کالا پتھر پی لیاجس سے اس کی حالت تشویشناک ہوگئی، محمد شریف کو تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال لایا گیا جہاں طبی امداد کے بعد نشتر ہسپتال ملتان منتقل کردیا گیا جہاں وہ جانبر نہ ہو سکا،ورثا  نعش لے کر اپنے گھر پہنچے ہوئے تھے جہاں 6بجے اس کی نماز جنازہ کا اعلان کیا گیا تھا،جنازہ کیلئے اہل علاقہ اکھٹے ہوئے کھڑے تھے اورمیت  جونہی  جنازہ گاہ پہنچی تو اطلاع پر پولیس کوٹ ادو موقع پر پہنچ گئی جس نے جنازہ پڑھنے سے پہلے ہی میت کو قبضہ میں لے لیا اور پوسٹ مارٹم کے لئے تحصیل ہیڈ کوارٹر اسپتال کوٹ ادو لے آئے، پولیس نے کاروائی کا آغاز کردیا ہے۔

حادثات

مزید :

ملتان صفحہ آخر -