خان گڑھ: انتظامیہ کا دعویٰ غلط نکلا بلدیہ ملازمین کا تنخواہیں نہ ملنے پر  مظاہرہ‘ کام چھوڑ ہڑتال‘ نعرے بازی

  خان گڑھ: انتظامیہ کا دعویٰ غلط نکلا بلدیہ ملازمین کا تنخواہیں نہ ملنے پر  ...

  

 مظفرگڑھ(نمائندہ پاکستان) انتظامیہ کی طرف سے خان گڑھ میں بلدیہ ملازمین کو تنخواہوں کی ادائیگی کا وعدہ جھوٹا نکلا، (بقیہ نمبر50صفحہ 7پر)

خان گڑھ میں بلدیہ کے سینیٹری ورکرز کی ضلعی انتظامیہ مظفرگڑھ کے خلاف تیسرے روز بھی کام چھوڑ ہڑتال جاری ہے۔تین ماہ سے بند تنخواہوں اور ٹاون کمیٹی خان گڑھ کی بحالی کا مطالبہ۔ خان گڑھ کے سینیٹری ورکرز کی ٹاون کمیٹی خان گڑھ کے خاتمے اور 3 ماہ سے تنخواہیں نہ ملنے پر ضلعی انتظامیہ کے خلاف کام چھوڑ ہڑتال تیسرے دن بھی جاری رہی،ہڑتالی مظاہرین کا کہنا ہے کہ خان گڑھ بلدیہ کو میونسپل کمیٹی کا درجہ حاصل تھا اسے میونسپل کمیٹی سے ٹاون کمیٹی میں تبدیل کیا گیا اور اب ٹاون کمیٹی بھی ختم کردی گئی ہے، سینیٹری ورکرز اور ڈیلی ویجز ملازمین کو گزشتہ 3 ماہ سے تنخواہیں ادا نہیں کی گئیں، جس کی وجہ سے ان کے گھروں میں فاقوں کی نوبت آ گئی ہے، دوکانداروں نے انہیں ادھار دینا بھی بند کر دیا ہے، ڈپٹی کمشنر مظفرگڑھ کو متعدد بار تنخواہوں کی ادائیگی کی طرف متوجہ کیا ہے، انہوں نے چیف آفیسر بلدیہ میونسپل کارپوریشن مظفرگڑھ عثمان سرویا کو ان کے پاس مذاکرات کیلئے بھیجا جو وعدہ کرکے چلے گئے۔

نعرے بازی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -