پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ‘ خزانہ من پسند پبلشرز پر نچھاور کرنیکا انکشاف 

پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ‘ خزانہ من پسند پبلشرز پر نچھاور کرنیکا انکشاف 

  

ملتان (جنرل رپورٹر)پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ کا خزانہ من پسند پبلشرز پر نچھاور کرنے کا انکشاف ہوا ہے‘  میٹرک اور انٹرمیڈیٹ کے پریکٹیکل امتحانات پر پابندی کے باوجود ٹیکسٹ بک بورڈ نے 30 کروڑ روپے کی پریکٹیکل کاپیوں کی اشاعت کے آرڈرز جاری کر دیئے۔  پنجاب کریکولم اینڈ ٹیکسٹ بک بورڈ نے قومی کتب خانہ کو پریکٹیکل کاپیوں کی اشاعت کیلئے آرڈرز جاری کیے ہیں، یہ ورک آرڈر 16 کروڑ چار لاکھ روپے مالیت پر(بقیہ نمبر7صفحہ 6پر)

 مشتمل ہے، قومی کتب خانہ،دو نجی پرنٹرز کے ساتھ مشترکہ پراجیکٹ کیتحت پریکٹیکل کاپیوں کی اشاعت کر رہا ہے، ٹیکسٹ بک بورڈ نے پریکٹیکل کاپیوں کی اشاعت کے احکامات 11 جنوری کو جاری کیے ادھر پنجاب کے تمام تعلیمی بورڈز نے میٹرک اور انٹرمیڈیٹ میں  پریکٹیکل امتحانات ختم کر دیئے ہیں، تعلیمی بورڈز نے رواں سال پریکٹیکل امتحانات نہ لینے کا نوٹیفکیشن نومبر 2020ء میں جاری کیا، تعلیمی بورڈز رواں سال میٹرک اور انٹرمیڈیٹ کے سائنسی مضامین کے پریکٹیکل امتحانات نہیں لیں گے۔علاوہ ازیں  پنجاب بورڈ کمیٹی چیئرمینز نے میٹرک اور انٹرمیڈیٹ کے امتحانات کے لئے شیڈول فائنل کرلیا، میٹرک کے امتحانات کا آغاز 4 مئی اور انٹرمیڈیٹ کے امتحانات کا آغاز 12 جون سے ہوگا، ذرائع کا کہنا ہیکہ سالانہ  امتحانات 2021 کیلئے پرچہ جات سمارٹ سلیبس کے مطابق تیار نہیں ہونگے، کچھ سوالات سمارٹ سلیبس سے باہر سے بھی دیئے جائیں گے۔

انکشاف

مزید :

ملتان صفحہ آخر -