امریکہ کا محمد بن سلمان پر صحافی جمال خاشقجی کو قتل کرنے کا الزام، امارات اور  کویت بھی میدان میں آگئے ،  جوبائیڈن کو واضح پیغام دے دیا

امریکہ کا محمد بن سلمان پر صحافی جمال خاشقجی کو قتل کرنے کا الزام، امارات اور ...
امریکہ کا محمد بن سلمان پر صحافی جمال خاشقجی کو قتل کرنے کا الزام، امارات اور  کویت بھی میدان میں آگئے ،  جوبائیڈن کو واضح پیغام دے دیا
سورس:   Pixabay

  

کویت سٹی (ڈیلی پاکستان آن لائن) صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے معاملے پر  امریکی انٹیلی جنس رپورٹ سامنے آنے کے بعد کویت نے کھل کر سعودی عرب کی حمایت کا اعلان کردیا۔

کویت کی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ وہ ہر اس چیز کی مخالفت کریں گے جو سعودی عرب کی خود مختاری کے خلاف تعصب سے بھرپور ہو۔

دوسری جانب عرب پارلیمنٹ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ وہ سعودی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری ہونے والے بیان کی مکمل حمایت کرتے ہیں اور ہر اس چیز کو مسترد کرتے ہیں جو سعودی عرب کی عدلیہ کی آزادی پر اثر انداز ہو۔ 

متحدہ عرب امارات کی وزارت خارجہ کی جانب سے بھی امریکی رپورٹ کے معاملے پر سعودی عرب کی کھل کر حمایت کا اعلان کیا  گیا ہے۔

خیال رہے کہ امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ سے وابستہ سعودی عرب کے صحافی جمال خاشقجی کو دو اکتوبر 2018 کو ترکی کے شہر استنبول میں  قائم سعودی قونصل خانے میں قتل کرکے ان کی لاش کو ٹکڑے ٹکڑے کردیا گیا تھا۔ اس کام کیلئے سعودی عرب سے خصوصی ٹیم خصوصی طیارے میں ترکی پہنچی تھی۔

گزشتہ روز جوبائیڈن انتظامیہ نے جمال خاشقجی کے قتل کے حوالے سے  انٹیلی جنس رپورٹ امریکی کانگریس کے روبرو پیش کی ہے۔ چار صفحات کی اس رپورٹ میں جمال خاشقجی کے قتل کا براہ راست الزام سعودی عرب کے ولی عہد محمد بن سلمان پر عائد کیا گیا ہے۔

دوسری جانب امریکہ  کی یہ انٹیلی جنس رپورٹ سامنے آنے کے بعد سعودی عرب نے اسے مسترد کردیا ہے ۔ سعودی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ  جمال خاشقجی قتل کے معاملے پر امریکی انٹیلی جنس کی رپورٹ منفی، غلط اور ناقابل قبول ہے جسے مسترد کرتے ہیں، امریکی رپورٹ میں غلط معلومات کی بنیاد پر نتیجہ اخذ کیا گیا ہے۔

سعودی وزارت خارجہ کا کہنا ہےکہ جمال خاشقجی قتل کیس میں سعودی حکام نے ملکی قوانین کے تحت ہر ممکن قدم اٹھایا اور بہتر انداز میں تحقیقات کیں تاکہ انصاف کی فراہمی یقینی بنائی جائے جب کہ ملزمان کو سعودی عدالت سے مجرم ٹھہرا کر سزائیں بھی دیں جن کا جمال خاشقجی کے اہلخانہ نے خیر مقدم کیا۔

مزید :

عرب دنیا -