امریکہ میں کئی بچوں کی مائیں انتہائی شرمناک کام سے پیسے کمانے لگیں، سکولوں میں ہنگامہ برپا ہوگیا

امریکہ میں کئی بچوں کی مائیں انتہائی شرمناک کام سے پیسے کمانے لگیں، سکولوں ...
امریکہ میں کئی بچوں کی مائیں انتہائی شرمناک کام سے پیسے کمانے لگیں، سکولوں میں ہنگامہ برپا ہوگیا
سورس:   Pxhere

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ میں گزشتہ دنوں ’اونلی فینز سکینڈل‘ منظرعام پر آیا جس کی زد میں اب مزید خواتین بھی آتی جا رہی ہیں۔ ڈیلی سٹار کے مطابق امریکی ریاست کیلیفورنیا کے شہر سیکرامینٹو کی رہائشی کرسٹل جیکسن نامی خاتون سب سے پہلے اس سکینڈل کی زد میں آئی تھی۔ اس کے تین بچے شہر کے کیتھولک سکول میں زیرتعلیم تھے، کسی اور بچے کے والدین نے کرسٹل کی اونلی فینز پر قابل اعتراض ویڈیو اور تصاویر دیکھ کر سکول کی انتظامیہ کو اطلاع دی جس پر کرسٹل کے تینوں بچوں کو سکول سے نکال دیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق ایک ماں کی قابل اعتراض ویڈیوز اور تصاویر پر بچوں کو سکول سے نکالے جانے پر امریکہ بھر میں ہنگامہ برپا ہو گیا۔ اس کے بعد سے اب تک ایسی کئی خواتین کے اونلی فینز اکاﺅنٹ سامنے آ چکے ہیں، جن پر وہ خواتین بھی اپنی فحش ویڈیوز اور تصاویر پوسٹ کرکے رقم کما رہی ہیں۔ ان میں سے بھی کئی خواتین کے بچے اسی کیتھولک سکول میں پڑھتے ہیں، ان کے علاوہ ان میں شامل بیشتر خواتین کے بچے جیزیوٹ ہائی سکول اور سیکریڈ ہارٹ پیرش میں بھی پڑھتے ہیں لیکن 44سالہ کرسٹل کے بچوں کی طرح ان کے بچوں کو سکول سے نہیں نکالا گیا۔ 

رپورٹ کے مطابق سکینڈل سامنے آنے پر کرسٹل کا کہنا ہے کہ ”میں نے اپنے شوہر کو لبھانے کے لیے Redditپر اپنی نیم برہنہ تصاویر پوسٹ کرنی شروع کی تھیں، وہیں سے مجھے اونلی فینز پر اکاﺅنٹ بنانے اور ایسی تصاویر کے ذریعے رقم کمانے کا آئیڈیا آیا۔ اب میں اونلی فینز سے ماہانہ لگ بھگ ڈیڑھ لاکھ ڈالر (تقریباً 2کروڑ 36لاکھ روپے)کما رہی ہوں۔ میں جانتی ہوں کہ میں نے کوئی غلط کام نہیں کیا، چنانچہ میں اپنا اونلی فینز اکاﺅنٹ بند نہیں کروں گی۔ 

مزید :

بین الاقوامی -