بھارت مقبوضہ علاقے کی آبادی کے تناسب کو تبدیل کرنے پر تلاہوا ہے 

  بھارت مقبوضہ علاقے کی آبادی کے تناسب کو تبدیل کرنے پر تلاہوا ہے 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (آئی این پی )کل جماعتی حریت کانفرنس آزاد کشمیر و پاکستان کے کنونیئر محمود احمد ساغر نے کہا کہ اقوام متحدہ اور انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیموں پر زور دیا ہے کہ وہ بھارت اور مقبوضہ کشمیرکی جیلوں میں غیر قانونی طورپر نظربند حریت رہنماﺅں اور کارکنوں کی حالت زار کا نوٹس لیں اور انکی جلد رہائی کیلئے اپنا کردار ادا کریں محمود احمد ساغر نے اسلام آباد میں جاری ایک بیان میں افسوس کا اظہار کیا کہ دوران حراست حریت کانفرنس کے رہنماﺅں اور کشمیری نظربندوں کو علاج معالجے اور مناسب خوراک اور وکلاءتک رسائی کے حق سے محروم رکھا جا رہا ہے موسم سرما کے دوران علاج معالجے سہولیات کی عدم فراہمی کی وجہ سے کشمیری نظربند علیل ہو جاتے ہیں بہت سے کشمیری سیاسی نظربند مختلف عارضوں میں مبتلا ہیں۔ انہوں نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کو یاد دلایا کہ کشمیریوں کے حق خودارادیت کے دیرینہ مسئلے کو فراموش کر دیا گیا اور مودی حکومت کشمیر ی عوام بالخصوص مسلمانوں کے ساتھ غلاموں جیسا سلوک رو ارکھے ہوئے ہے بھارتی حکمرانوں کی نظر میں کشمیری مسلمانوں کی کوئی اہمیت نہیں ہے اور انسانی حقوق کا عالمی اعلامیہ، جنیوا کنونشن اورحتی کہ اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کمیشن کی جموں و کشمیر پر 2018اور 2019کی رپورٹوں کو بھی بھارت نے کوئی اہمیت نہیں دی ۔ انہوں نے مزید کہا کہ بھارتی حکومت مقبوضہ علاقے کی آبادی کے تناسب کو تبدیل کرنے پر تلی ہوئی ہے ۔ کل جماعتی حریت کانفرنس آزاد کشمیر و پاکستان کے کنونیئر محمود احمد ساغر نے اقوام متحدہ پر زور دیا کہ وہ مقبوضہ کشمیر کے مظلوم عوام کے مصائب اور کشمیری نظربندوں کی حالت زار کا جائزہ لینے کے لیے ایک ٹیم مقبوضہ علاقے بھیجے۔
محمود احمد ساغر

سرینگر(این این آئی)مقبوضہ جموںوکشمیر میں پوسٹر چسپاںکیے گئے ہیں جن کے ذریعے لوگوں پر زور دیا گیا کہ وہ کشمیر دشمن بھارتی اقدامات کو ناکام بنانے کےلئے اپنی صفوں میں اتحاد و اتفاق کو مزید مضبوط بنائیں۔کشمیر میڈیاسروس کے مطابق جموںوکشمیر عوامی ریزسٹنس پارٹی کی طرف سے سرینگر اور دیگر علاقوں میںچسپاں پوسٹروں میں کہا گیاکہ بھارت جموں وکشمیرکے عوام کو ان کی سرزمین سے بے دخل کرنے اور انکے بنیادی حقوق ملکیت چھیننے کے منصوبہ پر عمل پیرا ہے ،ہندوتوا بھارتی حکومت اولیااللہ کی سرزمین میں غیر کشمیریوں کو بساکر جموں وکشمیر کی مسلم اکثریت کو اقلیت میں تبدیل کرنا چاہتاہے، بھارت کی کشمیر دشمن پالیسوں کا ڈٹ کر مقابلہ کرنے کیلئے اتحاد اور یکجہتی کے ساتھ اپنی آواز بلند کرنے کی ضرور ت ہے،سرزمین جموں وکشمیراسکے باشندوں کی ملکیت ہے، اپنی سرزمین کی حفاظت کرنا ہمارا فرض اور ذمہ داری ہے ۔پوسٹروں میں لکھا کہ ظالم اور غاصب کا ظلم زیادہ دیر تک نہیں رہتا ،جموں وکشمیر کے عوام کو گھبرانا نہیں چاہئے ،ہمیں اپنے حقیقی مو قف پر مضبوطی سے قائم رہنا ہے، ہم پرایک بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہے کیوں کہ ہم جموں وکشمیر کے عوام کی قربانیوں اور شہداکے وارثین ہیں۔پوسٹروں کے ذریعے جموں وکشمیرکے عوام سے اپیل کی گئی کہ وہ اپنے صفوں میں اتحا د کو مضبوط و توانا بنائیں اورکل جماعتی حریت کانفرنس کے پروگراموں کو بھر پور طریقے سے کامیاب بنا ئیں۔
مقبوضہ کشمیر

مزید :

صفحہ آخر -