سرح سود میں اضافہ سے مہنگائی و قرضے بڑھیں گے: محمد حسین محنتی 

  سرح سود میں اضافہ سے مہنگائی و قرضے بڑھیں گے: محمد حسین محنتی 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


   کراچی(سٹاف رپورٹر) جماعت اسلامی سندھ کے امیر وسابق ایم این اے محمد حسین محنتی نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف کی ڈکٹیشن پرشرح سود میں مزید اضافہ سے نہ صرف ملک میں مہنگائی وقرضے بڑھیں گے بلکہ معیشت کو ناقابل تلافی نقصان پہنچے گا، گردشی قرضہ 750 ارب سے متجاوزہوگیا دیوالیہ ہونے کا خطرہ ہے مگر حکمراں ٹولہ اب بھی اپنی روش کو تبدیل کرنے کے لیے تیار نہیں ہے۔ سودی نظام معیشت نے ملک کا بیڑہ غرق کردیا، عوام مہنگائی، بیروزگاری،بدامنی اور قرضوں کے جال میں پھنس کر زندگی اور موت کے کشمکش میں مبتلا ہوچکے لیکن حکمران اشرافیہ اور مقتدرقوتوں کو ملک اور قوم کی مفاد کے بجائے اپنی حکمرانی کو طول دینے میں مصروف عمل ہیں۔جب پاکستان بنا تب ہمارے بڑوں نے بتایا کہ ہم مسجد اللہ کا گھر بنارہے ہیں لیکن آج ہمارے اوپر ایسے نااہل، کرپٹ، ظالم حکمران مسلط ہوئے ہیں جنہوں نے کلمے کے نام پر وجود میں آنے والی مملکت خداداد کو لوٹا، اسلامی قوانین کا مذاق اڑایا اور سود کو عام کیا ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جماعت اسلامی سندھ کے تحت قباء آڈیٹوریم میں امیدواران کی دوروزہ تربیت گاہ سے ا خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ دنیا کی زندگی کااصل حاصل مقصد اخروی کامیابی ہے اللہ تعالیٰ نے دنیا میں مال ودولت، اہل وعیال، کاروبار سمیت دیگر چیزوں کو پرکشش بناکر انسان کی بہت بڑی آزمائش کی ہے کہ میرا بندہ دنیاوی چیزوں سے دل لگاکر اپنے اصل مشن کو بھول جاتا ہے یا دنیا کے ساتھ آخرت کی کامیابی اورمیری زمین پر میرے دیئے ہوئے نظام کے مطابق زندگی گذارتا ہے۔اللہ تعالیٰ نے بار بار قرآن پاک میں اہل ایمان کو مخاطب کرکے فرمایا کہ قران مجید کی تعلیمات اور رسولؐ کے اسوہ حسنہ کو اپنا ماڈل بناکر پیش کیا ہے،صحابہ روشن ستارے ہیں جن کی پیروی کرنے سے دنیا اور آخرت میں کامیابی حاصل ہوگی۔جماعت اسلامی کی دعوت عظیم دعوت اور عظیم الشان جدوجہد کا نام ہے۔محمد حسین محنتی نے مزید کہا کہ کراچی میں نعمت اللہ خان،عبدالستار افغانی کی محنت اور حافظ نعیم الرحمن کی جدوجہد کراچی کے حقوق کیلئے آواز بلند کرنے کی بدولت جماعت اسلامی کو بڑی کامیابی ملی ہے اب اندرون سندھ وڈیرہ شاہی، سرداری نظام اور کرپٹ افسر شاہی کیخلاف کمربستہ ہوکر میدان میں نکلنے کا وقت ہے۔ کارکن اور قیادت اس بڑے معرکے کیلئے تیار ہوجائیں کیوں کہ عوام بار بارآزمائے ہوئے سیاستدانوں کی ناقص حکمرانی کے نتیجے میں مہنگائی، بدامنی، بیروزگاری، معاشی تباہی کی وجہ سے تنگ آچکے ہیں ہمیں بس ان تک اپنی دعوت پہنچانے کی ضرورت ہے۔حکمرانوں کی ناکامیاں اپنی جگہ لیکن قوم کو جگانے کی ضرورت ہے کہ اب تو آنکھیں کھول اور سامری کے سحر سے نکل آؤ ورنہ یہ ظالم جاگیردار،وڈیرے، کرپٹ افسر شاہی تمہیں نسل درنسل غلام بناکر ایسے ہی بیرونی اداروں سے بھاری قرض لیکر تمہیں گروی اور غلام بناکر رکھے گی، پاکستان کی بقا،سلامتی اور قوم کے تمام مسائل کا حل اسلام کے آفاقی نظام میں موجود ہے اسلئے اب قوم کو بار بار آزمائے ہوئے سیاسی جماعتوں کی بجائے جماعت اسلامی کی دیانتدار قیادت کا ساتھ دیکر ملک کو محفوظ اور اپنے آنے والی نسلوں کا مستقبل بہتر بنانا چاہئے۔تربیتی اجتماع سے مولانا آفتاب احمد ملک اورمفتی عرفان عادل نے بھی خطاب کیا۔