وزیراعلیٰ اور وزیر صحت میں تلخ کلامی کیوں ہوئی؟ سندھ کی نگران صوبائی کابینہ کے اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آ گئی

وزیراعلیٰ اور وزیر صحت میں تلخ کلامی کیوں ہوئی؟ سندھ کی نگران صوبائی کابینہ ...
وزیراعلیٰ اور وزیر صحت میں تلخ کلامی کیوں ہوئی؟ سندھ کی نگران صوبائی کابینہ کے اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آ گئی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی(خسوصی رپورٹ) سندھ کی نگراں کابینہ کے اجلاس میں نگران وزیر اعلیٰ مقبول باقر اور صوبائی وزیر صحت کے درمیان تلخ کلامی ہوئی اور بات اس حد تک آگے بڑھ گئی کہ سیکیورٹی کو طلب کرنا پڑا۔

 نگراں وزیرصحت ڈاکٹر سعد نیاز نے ناخوشگوار واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے کہاہے کہ مجھے دھمکیاں دی گئیں، وکلاء سے بات کر رہا ہوں اور نگراں وزیراعلی مقبول باقر کو قانونی نوٹس بھجواؤں گا۔ وزیر اعلیٰ مقبول باقر نے مجھے کابینہ ممبران کے سامنے دھمکیاں دیں۔

"جنگ " کے مطابق گذشتہ روز نگراں صوبائی کابینہ کے الوادعی اجلاس میں سندھ کے نگران وزیر اعلیٰ مقبول باقر اور صوبائی وزیر صحت کے درمیان ناخوشگوار واقعے کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔ذرائع کے مطابق تلخ کلامی سے بات آگے بھی بڑھ گئی جس کی وجہ سے سیکیورٹی اہلکار وں کو طلب کرنا پڑا۔ دو ران اجلاس نگراں وزیراعلی سندھ مقبول باقر اور نگراں وزیر صحت سعد خالد نیاز میں ہونے والی زبانی توتو میں میں دھمکیوں تک جا پہنچی۔اجلاس کے دوران دونوں نے ایک دوسرے پر الزامات لگائے۔تاہم وزیر اعلیٰ ہاؤس نے اس کی تصدیق یا تردید نہیں کی۔